عدالت کے حکم پر2 ریفرنسز میں نواز شریف کی طلبی کیلئے اخبارات میں اشتہار شائع

اسلام آباد ہائیکورٹ کے حکم پر سابق وزیراعظم نواز شریف کی العزیزیہ اور ایون فیلڈ ریفرنس میں طلبی کے لیے 2 اخباروں میں اشتہار شائع کرا دیا گیا۔اشتہارات کے مطابق نواز شریف کو 24 نومبر تک عدالت میں پیش ہونے کی مہلت دی گئی ہے۔

اخبار میں شائع ہونے والے ایک اشتہار میں العزیزیہ ریفرنس 19/2017 کا حوالہ دے کر لکھا گیا ہے کہ نواز شریف کو 24 دسمبر 2019 کو جس ریفرنس میں 7 سال قید اور ڈیڑھ ارب روپے جرمانہ کے ساتھ 10 سال کے لیے نااہل کیا گیا تھا اس ریفرنس میں نواز شریف عدالت میں 24 نومبر تک پیش ہوں۔

دوسرے اشتہار میں لکھا گیا ہے کہ 6 جولائی 2018 کو ایون فیلڈ ریفرنس نمبر20/2017 میں معزز عدالت کی جانب سے نواز شریف کو 10 سال قید، 8 ملین پاؤنڈ جرمانہ اور 10 سال نا اہل کیے جانے کی سزا دی گئی تھی۔ جس کی پیشی کے لیے نواز شریف 24 نومبر تک عدالت میں پیش ہوں۔

یاد رہے کہ 13 اکتوبر کو اسلام آباد ہائیکورٹ میں ہونے والی پیشی کے موقع پر عدالت نے العزیزیہ اور ایون فیلڈ ریفرنس میں نواز شریف کی طلبی کا اخبار اشتہار جاری کرنے کی ہدایت کی تھی۔

عدالت نے حکم دیا تھا کہ اشتہار لاہور اور لندن کے ایڈیشنز میں شائع ہو گا، جس کے بعد 5صفحات پر مشتمل خط ایڈیشنل اٹارنی جنرل طارق کھوکھر نے پی آئی ڈی کو لکھ دیا تھا۔ خط کے مطابق نواز شریف کا اشتہار اردو اور انگریزی کے 2اخبارات کے لاہور اور لندن کے ایڈیشنز میں شائع کیا جانا تھا۔

اسلام آباد ہائی کورٹ اشتہار کے لیے خصوصی ہدایت جاری کی تھی کہ سیاہ سیاہی سے بیک پیج کے ایک چوتھائی حصے پر اشتہار چھپوایا جائے، جس میں بطور خاص لکھا جائے کہ نواز شریف اسلام آباد ہائیکورٹ سے مفرور ہیں، نواز شریف کو بذریعہ اشتہار پیشی کا آخری موقع دیا جاتا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >