سستے آٹے کی فراہمی کیلئے ذخیرہ اندوزوں کے خلاف پنجاب حکومت کی کاروائیاں تیز

پنجاب حکومت نے صوبے میں آٹے کی قلت پیدا کرنے والے ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کے خلاف کمر کس لی، پنجاب حکومت نے آٹے کی قلت پیدا کرنے یا زائد قیمت پر بیچنے والوں کے خلاف شہری شکایات کے لیے ٹال فری نمبر قائم کر دیا، تاکہ شہریوں کو سرکاری قیمت پر آٹے کی دستیابی یقینی بنائی جا سکے۔

پنجاب حکومت کی جانب سے جاری کیے گئے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ پنجاب بھر میں کوئی بھی شخص، دوکان دار یا ڈیلر اگر آٹے کے مقرر کردہ سرکاری نرخوں سے زیادہ قیمت پر آٹا بیچ رہا ہے تو شہری اس کے خلاف فوری شکایت درج کرو سکتے ہیں۔

اعلامیے کے مطابق شہری ذخیرہ اندوزوں اور منافع خوروں کے خلاف ٹال فری نمبر 60606_0800 پر مفت کال کر کے اپنی شکایت درج کروا سکتے ہیں، شہری کی شکایت پر فوری ایکشن لیتے ہوئے شخص، دوکان دار یا ڈیلر کے خلاف کارروائی عمل میں لائی جائے گی۔

گزشتہ روز سرگودھا میں زخیرہ اندوزوں کے خلاف کاروائی کرتے ہوئے 7 ڈیلروں سے چینی اور گھی کا بڑا سٹاک برآمد کر لیا گیا ، سپیشل پرائس کنٹرول مجسٹریٹ نے موقع پر کاروائی کرتے ہوئے سٹاک برآمد کر کے دوکانیں اور گودام سیل کر دئیے۔

گزشتہ رات ہنجروال میں واقع گودام پر چھاپہ مار کر چینی کے50KG کے800سے زائد بیگز برآمد کر لیےگئے۔ قانون کے مطابق ایکشن لیتے ہوئے90000روپےجرمانہ کیاگیا جبکہ 4 افراد کے خلاف ایف آئی آر بھی درج کی گئی۔

خیال رہے کہ پنجاب حکومت کی جانب سے 20 کلو آٹے کے تھیلے کی سرکاری قیمت 860 اور دس کلو گرام کے آٹے کے تھیلے کی سرکاری قیمت 430 روپے مقرر کی گئی ہے۔

دوسری جانب پنجاب حکومت نے مختلف شہروں میں سہولت بازار قائم کردئیے ہیں جہاں 20 کلو آٹے کا تھیلا 845 روپے اور 10 کلو آٹے کا تھیلا 420 روپے میں دستیاب ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >