سندھ پولیس کے افسران بلاول ہاؤس کے اشارے پر چھٹی پر گئے، وفاقی وزیر فواد چودھری

کیپٹن ریٹائرڈ صفدر پر مزار قائد کے احاطے میں نعرے لگانے پر مقدمے اور گرفتاری کیلئے پولیس حکام پر دباؤ کے معاملے پر گزشتہ روز آئی جی سندھ مشتاق مہر سمیت متعدد اعلیٰ پولیس افسران نے چھٹی پر جانے کا فیصلہ کیا تھا۔ چھٹی کی درخواستیں دینے والوں میں آئی جی سندھ، 3 ایڈیشنل آئی جی، 25 ڈی آئی جی اور 30 ایس ایس پی شامل تھے۔

سندھ پولیس کے ان افسران نے اپنی درخواستوں میں لکھا تھا کہ کیپٹن ریٹائرڈ صفدر کے خلاف ایف آئی آر کے واقعے میں پولیس افسران کو بے عزت اور ہراساں کیا گیا، افسران سے ہوئے ناروا رویے پر تمام پولیس افسران کو دھچکا لگا ہے۔

اس ساری صورتحال پر رد عمل دیتے ہوئے وفاقی وزیر سائنس و ٹیکنالوجی فواد چودھری نے کہا کہ کوئی شبہ ہی نہیں کہ سندھ پولیس کے افسران بلاول ہاؤس کے اشارے پر چھٹی پر گئے ہیں۔

وفاقی وزیر نے سندھ پولیس کے افسران کے اس عمل پر تنقید کرتے ہوئے کہا کہ جب اومنی والوں کے سامنے لائن لگا کر کھڑے ہوتے تھے تو بھی اس طرح کا ردعمل ہوتا۔

انہوں نے کہا کہ پاکی داماں کی یہ حکائیت آگے بڑھی تو معاملات کھلیں گے، اداروں کو نیچا دکھانے کی کوششیں اور سازشیں ناکام بنانی ہوں گی۔

  • جب تک سسٹم میں ان غلام پولیس والوں کو نوکریوں سے فارغ کر کے نئے لوگوں کو نہیں لایا جائے گا اس طرح کے واقعات ہوتے رہیں گے سیاست دانوں نے ان پولیس والوں کو اتنا کرپٹ کر دیا ھے کہ اب کرپٹ سیاست دان اور کرپٹ پولیس والا ایک دوسرے کے بغیر سسٹم میں زندہ نہیں رہ سکتے۔

    • زرداری اور لوہار کے راج میں لوگوں نے اپنے سارے حرامی بچے پولیس میں بھرتی کروا ۔کر زرداری اور لوہار کی ولدیت میں دے دئیے تھے یہ سب وہی ہیں

  • اس میں کوئی شک نہیں ھے کہ کرپٹ سیاست دانوں کا ٹولہ اور کرپٹ پولیس افسران کا مرنا جینا اب اس کرپٹ سسٹم سے اور کرپٹ سیاست دانوں سے وابستہ ھے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >