پمز اسپتال میں آپریشن کے بعد 2 بہنوں کی جنس تبدیل کرکے لڑکا بنادیا گیا

پمز اسپتال میں آپریشن کے بعد 2 بہنوں کی جنس تبدیل کر دی گئی

پمز اسپتال کے مشہور پیڈیاٹرک سرجن پروفیسر ڈاکٹر امجد چودھری کے مطابق گجرات سے تعلق رکھنے والے خاندان کی 9 بچیاں تھیں جن میں سے 2 کی جسمانی حالت دیگر سے مختلف تھی جن کا آپریشن کرنے کے بعد ان کو لڑکی سے لڑکا بنا دیا گیا ہے۔ ڈاکٹر امجد چودھری نے بتایا کہ 9 میں سے 2 کو لڑکا بنتے دیکھ کا ان کے اہل خانہ بہت خوش ہیں۔

تفصیلات کے مطابق غیر معمولی جسامت اور خدوخال کی وجہ سے دونوں بچیوں کو اسلام آباد کے پمز اسپتال لیجایا گیا جہاں پتہ چلا کہ دونوں بہنیں اے”ٹیپیکل جینیٹیلیا” ہیں۔ اس کیفیت میں جنسی اعضا واضح نہیں ہوتے اور لڑکا اور لڑکی ہونے کا تعین نہیں کیا جاسکتا۔ انسانوں میں یہ کیفیت شاذ و نادر ہوتی ہے۔

ڈاکٹر امجد چودھری نے بتایا کہ آپریشن سے قبل ان کی نفسیاتی کونسلنگ کی گئی، پھر والدین اور ان کی مرضی سے ان کو آپریشن کے ذریعے مرد بنانے کا فیصلہ کیا گیا۔

تمام ضروری ٹیسٹوں کے بعد 29 ستمبر کو بشری کا آپریشن کیا گیا جبکہ 9 اکتوبر کو وافیہ کا آپریشن کیا گیا۔ آپریشن کے بعد اب ان کی جنس تبدیل کردی گئی ہے اور اب ان کو ہسپتال سے ڈسچارچ کردیا ہے۔ ڈاکٹر امجد کا کہنا ہے کہ اب آپریشن کروانے والی بہنیں اور ان کے گھر والے بہت خوش ہیں۔ اپنے مریضوں کو تسلی بخش علاج کی فراہمی پر ڈاکٹر امجد بھی خوش ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >