میوزک چرانے کا الزام،گلوکار فہد ہمایوں نے کوکا کولا کو قانونی نوٹس بھیج دیا

پاکستانی گلوکار اور ریکارڈ پروڈیوسر فہد ہمایوں نے اپنا میوزک چرانے کے الزام میں کوکاکولا کو نوٹس بھیج دیا ہے، جس میں فہد ہمایوں نے کہا ہے کہ کوکا کولا نے ان کے 2011 میں ریلیز ہونے والے گانے کے بول اور میوزک چرایا ہے۔

کوکا کولا کی جانب سے چند روز قبل ایک اشتہار جاری کیا گیا تھا جس میں کوکا کولا کی جانب سے کوک اسٹوڈیو کے 13ویں سیزن کے جلد ہی شروع ہونے کی خوشخبری سنائی تھی، کوکاکولا کے جاری اشتہار میں میشا شفیع کی آواز میں "نیڑے آ” گانے کے بول اور میوزک بھی شامل ہے۔

بعد ازاں گلوکارہ میشا شفیع نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر اپنے دو ٹویٹس میں بھی کوک سٹوڈیو کے 13ویں سیزن کے جلد شروع ہونے اور کوک اسٹوڈیو میں دوبارہ سے واپسی سے متعلق اپنے مداحوں کو آگاہ کیا تھا۔ میشا شفیع ایک لمبے عرصے کے بعد کوک سٹوڈیو کا پانچویں مرتبہ چار سال کے بعد حصہ بننے جا رہی ہیں۔

گلوکار فہد ہمایوں نے کوکا کولا پر الزام لگاتے ہوئے کہا ہے کہ کوکا کولا نے ان کے "نیڑے آ” گانے جو 2011 میں ریلیز ہوا تھا کا میوزک سے لیکر بول چرائے ہیں، جو کوکا کولا کی سوشل میڈیا پر صارفین میں کافی مقبول ٹیزرز کا حصہ ہیں۔

دوسری جانب فہد ہمایوں کی ٹیم کا خبر رساں ادارے سے بات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ فہد ہمایوں کے میوزک کی جو کوکا کولا نے نقل کی ہے اس سے ہمیں انتہائی مایوسی ہوئی ہے، ایک طرف تو کوک اسٹوڈیو مقامی سطح پر میوزک انڈسٹری کو فروغ دینے کے لیے  خود کو چیمپئن کے طور پر پیش کرتا ہے لیکن دراصل وہ ایسا کرنے کا صرف دکھاوا کرتا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >