اسلام مخالف بیان اور گستاخانہ خاکوں پر فرانسیسی سفیر کی دفتر خارجہ طلبی

فرانسیسی صدر ایمانوئل میکرون کے اسلام مخالف بیان پر فرانسیسی سفیر کی دفتر خارجہ طلبی

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی کی جانب سے جاری کردہ بیان میں کہا گیا ہے کہ فرانس کے سفیر کو دفتر خارجہ طلب کر کے توہین آمیز خاکوں پر احتجاج کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا اقوام متحدہ سے مطالبہ کیا ہے کہ وہ اسلام مخالف بیانیے کا فوری نوٹس لے۔ان کا کہنا تھا کہ اسلام مخالف بیانیے پر ہم اپنا احتجاج ریکارڈ کرائیں گے، کسی کوحق نہیں کہ مسلمانوں کی دل آزاری کرے۔

وزیر خارجہ نے کہا کہ فرانس کےصدر کے غیر ذمہ دارانہ بیان نے جلتی پر تیل کا کام کیا ہے۔ نفرت کے جو بیج بوئے جا رہے ہیں ان کے نتائج شدید ہوں گے۔

اس سے قبل وزیراعظم عمران خان نے فیس بک کے سربراہ مارک زکربرگ کو اسلام مخالف مواد پر پابندی لگانے کے لیے خط لکھا۔

وزیراعظم عمران خان نے مطالبہ کیا کہ اسلاموفوبیا اور اسلام مخالف مواد پر بھی ہولوکاسٹ جیسی پابندیاں لگائی جائیں۔

انہوں نے کہا کہ اسلاموفوبیا مواد سوشل میڈیا اور فیس بک پر پھیلایا جا رہا ہے،ایسا مواد نفرت، انتہا پسندی، تشدد کو ہوا دے رہا ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ مسلمانوں کے خلاف دنیا کے مختلف ممالک میں یہی صورتحال دیکھ رہے ہیں، بدقسمتی سے کچھ ممالک میں مسلمانوں کو شہری حقوق حاصل نہیں جب کہ کچھ ریاستوں میں مسلمانوں کو لباس سے لے کر عبادت تک سے محروم کیا جا رہا ہے۔
عمران خان نے کہا کہ فرانس میں گستاخانہ خاکوں کی اشاعت کی اجازت سے اسلام کو نشانہ بنایا جا رہا ہے، فرانس میں اسلام کو دہشت گردی سے جوڑنے کی سازش ہو رہی ہے۔

  • Ahtijaj krna kafi nhi tamam muslim hukmrano ko chahye kh turki ki trha in ky safeeron ko wapis bhijh dya jay kisi bhi muslim mulk min in ka safeer nhi hona chahye aur tamam Muslim mumalik ky srbrahon ko akhta kr ky aisa lahry amal bnaya jay kh aynda aisi harkt krny ki kisi ko jurat na ho


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >