کابینہ اجلاس کی اندرونی کہانی ، وزراء مہنگائی پر پھٹ پڑے

وزیراعظم عمران خان کی زیر صدارت ہونے والے کابینہ اجلاس کی اندرونی کہانی سامنے آگئی ہے، وزراء مہنگائی پر پھٹ پڑے۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ کے اجلاس میں مہنگائی پر ڈھائی گھنٹے طویل بحث ہوئی، اس دوران وزراء پرویز خٹک ،مراد سعید ،فیصل واوڈا ،ندیم افضل چن ملک میں جاری مہنگائی پر پھٹ پڑے۔

وزراء اور مشیروں نے مہنگائی کے خاتمے کے لیے تجاویز دینے کے ساتھ ساتھ کہا کہ ہمارے حلقوں کے عوام مہنگائی کا رونا روتے ہیں۔

ذرائع کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے کابینہ اجلاس میں ایک بار پھر کہا کہ مہنگائی کو کنٹرول کرنے کے لیے اقدامات کررہے ہیں۔جب تک مہنگائی کنٹرول نہیں ہوگی، چین سے نہیں بیٹھوں گا۔

اس موقع پر وزیر اعظم عمران خان نے مہنگائی پر قابو پانے کے حکومتی پلان سے آگاہ کیا اور کہا کہ اشیاء ضروریہ کی وافر مقدار میں موجودگی سے مہنگائی کم ہوگی جبکہ گندم اور چینی کی درآمد سے قیمتوں میں کمی آئی ہے۔

پرویز خٹک کا کہنا تھا کہ مہنگائی کےحوالےسےہمیں بیوروکریٹس خراب کررہے ہیں،مہنگائی پرقابو نہ پانابیوروکریسی کی ناکامی ہے۔کیوں بروقت اقدامات نہیں اٹھائے گئے؟

کابینہ اجلاس کے دوران فیصل واڈا نے کہا کہ بیوروکریٹس کے روایتی ہتھکنڈے بے نقاب ہونے چاہیے لیکن کسی وزیر کی جانب سے کمزوری ہے تو اس کی بھی نشاندہی ہونی چاہیے

جس پر سیکریٹری فوڈ سیکیورٹی نے کہا کہ ہم 30،30سال سروس کرچکے ہیں ساری ذمہ داری نہ ڈالی جائے۔

فواد چوہدری کا کہنا تھا کہ گندم اور چینی سے متعلق درست اعداد و شمار نہ دینے والے افسران کی نشاندہی ہونی چاہیے۔

ذرائع کے مطابق وفاقی کابینہ کو گندم، چینی سمیت اشیائے ضروریہ کی دستیابی پر بریفنگ دی گئی۔وزارت صنعت و تجارت کی 30 جنوری2021ء تک گندم کی درآمد کی ٹائم لائن اور چینی کی درآمدی شیڈول اور قیمتوں میں کمی پر بریفنگ دی گئی۔

ذرائع کے مطابق اجلاس میں نان ٹریٹی ممالک کی جانب سے میوچل لیگل اسسٹنٹس کی درخواستوں اور پاکستان ریلویز کی بحالی کے پلان کی منظوری دے دی گئیں۔

  • from this news, it seems like they all dont have idea why the price hike is happening.
    they are crying to each other without knowing how to control it.

    Its all about Demand and supply. Control the price at the source and dont kill the messenger (The retailer)

    Manufacturer/ Producer/ importer –> Distributer –> wholesaler –> retailer

    Keep check of prices at these level and find out where the problem is.

    What is the rocket science in this ??


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >