کرونا وائرس کی دوسری لہر، این سی او سی نے نئے ایس او پیز جاری کر دیئے

کرونا وائرس کی دوسری لہر، این سی او سی کا بڑا فیصلہ، ہر شہری کے لئے ماسک پہننا لازمی قرار دے دیا۔

کرونا وائرس کی دوسری شدید لہر کی وجہ سے ملک میں کرونا وائرس کے بڑھتے کیسز  کی تعداد میں اچانک اضافے کی وجوہات کا جائزہ لینے کے لیے اسلام آباد میں نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر میں اہم اجلاس ہوا۔

این سی او سی کے اجلاس میں یہ فیصلہ کیا گیا ہے کہ جو گیارہ بڑے شہر کرونا وائرس سے سب سے زیادہ متاثر ہیں، وہاں کے لوگوں کے لیے ماسک پہننا لازمی قرار دیا گیا ہے اور ہدایت کی گئی ہے کہ تمام لوگ گھروں سے نکلنے سے پہلے لازمی ماسک پہنیں۔

نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کے اجلاس میں متاثرہ علاقوں کی مارکیٹ اور دکانیں رات 10 بجے بند کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے، اس کے علاوہ تمام ریسٹورنٹ شادی ہالز رات 10 بجے بند کر دیے جائیں گے اور عوامی پارکس کو بھی شام چھ بجے بند کر دیا جائے گا۔

دوسری جانب تاجر رہنما جمیل راجا کا نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کیے گئے نئے ایس او پیز پر اظہار خیال کرتے ہوئے کہنا تھا کہ نیشنل کمانڈ اینڈ آپریشن سینٹر کی جانب سے جاری کیے گئے ایس او پیز پر ہم پوری طرح سے عمل درآمد کروائیں گے اور تمام شاپنگ مالز اور مارکیٹس کو رات دس بجے بند کر دیا جائے گا۔

انہوں نے کہا کہ ہم اس چیز کا بھی خیال رکھیں گے کہ کوئی بھی فرد ماسک کے بغیر شاپنگ مال یا مارکیٹوں یا دکانوں میں داخل نہ ہو اور نہ ہی اسے کوئی سروس فراہم کی جائے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >