اے پی ایس حملہ ہو یا مدرسہ بم دھماکا،دشمن ایک ہے،آرمی چیف

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق چیف آف آرمی اسٹاف جنرل قمر جاوید باجوہ نے اپردیر مالاکنڈ ڈویژن کا دورہ کیا، جہاں پر پشاور کور لیفٹیننٹ جنرل نعمان محمود نے ان کا استقبال کیا، دورے کے دوران آرمی چیف کو اسٹیبلائزیشن آپریشن اور بارڈر مینجمنٹ پر بریفنگ دی گئی۔

آئی ایس پی آر کے مطابق اپنے اپر دیر مالاکنڈ ڈویژن کے دورے کے دوران آرمی چیف نے سنگلاخ اور دشوار علاقے میں بارڈر فینسنگ پر کارکردگی کو سراہتے ہوئے کہا کہ سرحدوں کی حفاظت اور بارڈر مینجمنٹ امن کےعزم کی عکاس ہیں، آرمی چیف نے امن کی فضا قائم رکھنے والے پاک فوج کے جوانوں کی کوششوں کی تعریف کرتے ہوئے انہیں حالیہ ہوئے دہشت گردوں کے حملے کے بعد سے مزید چوکنا رہنے کی ہدایت کی۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ آئی ایس پی آر کے مطابق آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ نے مدرسے میں دھماکے میں زخمی ہونے والے بچوں کی لیڈی ریڈنگ اسپتال میں عیادت کی اور ان سے ان کی صحت کے بارے میں دریافت کیا، آرمی چیف کا اس موقع پر کہنا تھا کہ 16 دسمبر 2014 کو اے پی ایس میں معصوم بچوں کو نشانہ بنایا گیا تھا اسی طرح گزشتہ روز بھی ایک بار پھر بچوں کو ٹارگٹ کیا گیا۔

آرمی چیف نے کہا کہ پاکستانی قوم نے دہشت گردوں کے بیانیے کو مسترد کر کے یکجہتی کا مظاہرہ کیا تھا اور آج بھی اسی جذبے کے تحت ہم ایک ہیں اور ایک ہی رہیں گے، یکجہتی اور اظہار عزم کیلئے بچوں، اساتذہ اور خاندانوں کا دکھ بانٹنے کے لیے یہاں آیا ہوں اور مدرسے کے دھماکے میں شہید ہونے والے بچوں کے خاندانوں کے دکھ میں برابر کے شریک ہیں، ہم تب تک چین سے نہیں بیٹھیں گے جب تک دہشت گردوں کو کیفر کردار تک نہیں پہنچا لیتے۔

جنرل باجوہ کا کہنا تھا کہ مدرسے پر حملہ دراصل اسلام دشمنی ہے، دہشت گردوں کا نشانہ عبادت گاہیں، تعلیمی ادارے اور شہری ہیں، پاکستان ہمیشہ افغانستان میں امن کا خواہاں ہےاور افغانستان میں قیام امن کے لئے ہمیشہ تعاون کرتا رہے گا، افغانستان اور پاکستان نے پچھلی دودہائیوں میں دہشت گردی کا سامنا کیا، پاکستان نے مہاجرین بھائیوں کیلئے دل اور دروازے کھول دیئے، ہمیشہ افغان بھائیوں کے دکھ اور سکھ میں شریک ہیں۔

انہوں نے کہا کہ افغانستان اور پاکستان کا امن ایک دوسرے سے جڑا ہوا ہے جب کہ دہشت گردی کا کوئی مذہب نہیں ہوتا، دہشت گردوں کا مقصد ہر طرف خوف و ہراس پھیلانا ہے،جس میں ہم انہیں کبھی کامیاب نہیں ہونے دیں گے، افغان مہاجرین کو بھی دشمن قوتوں سے چوکنا اور دور رہنا ہو گا، تاکہ وہ دانستگی اور نادانستگی میں ان کے آلہ کار بن کر استعمال نہ ہو سکیں۔

  • Anyone wo looted country is enemy of the country certified thug is NAWAZ CHOAR ZARDARI SHOBAZ cases already advanced in courts.
    Anyone who ruled in last 49 years till 2018 was thug that is why
    country is damaged. they are all responsible

  • Hang on a second. Ehsaan ullah Ehsaan admitted that TTP is responsible for the gruesome murder of APS children. If the murders are same then it means He is admitting that TTP is responsible for Peshawar children massacre . Then why the hell they released Ehsaan ullah Ehsaan ?


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >