پارلیمنٹ حملہ کیس میں عدالت نے وزیراعظم عمران خان کو بری کر دیا

اسلام آباد:پارلیمنٹ حملہ کیس میں انسداد دہشت گردی عدالت نے وزیراعظم عمران خان کو بری کر دیا۔

تفصیلات کے مطابق پارلیمنٹ حملہ کیس میں وزیراعظم عمران خان کی بریت کی درخواست پر انسداد دہشت گردی عدالت کے جج راجہ جواد عباس نے محفوظ شدہ فیصلہ سنایا جس کے مطابق عدالت نے وزیراعظم عمران خان کی بریت کی درخواست منظور کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کو بری کر دیا۔

وزیراعظم عمران خان کے وکیل نے بریت کی درخواست پر تحریری دلائل جمع کراتے ہوئے مؤقف اختیار کیا تھا کہ عمران خان کو جھوٹے اور بےبنیاد مقدمے میں پھنسایا گیا، ان کے خلاف کوئی ثبوت نہیں، نہ ہی کسی گواہ نے ان کے خلاف بیان دیا۔

دوسری جانب عدالت نے دیگر ملزمان پر فرد جرم عائد کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔عدالت نے مقدمے میں نامزد ملزمان جن میں وفاقی وزراء شاہ محمود قریشی، پرویز خٹک، شفقت محمود، اسد عمر، اور علیم خان سمیت دیگر شامل ہیں کو آئندہ سماعت پر طلب کر لیا ہے۔

عدالت نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ صدر مملکت کو استثنیٰ حاصل ہے اس لیے ان کی حد تک تو کیس نہیں چلایا جائے گا لیکن مقدمے میں نامزد دیگر ملزمان پر 12 نومبر کو فرد جرم عائد کی جائے گا۔

یاد رہے کہ وزیراعظم عمران خان نے پی ٹی وی اور پارلیمنٹ حملہ کیسز میں بریت کی درخواستیں دائر کی تھیں اور اس سے قبل عدالت وزیراعظم عمران خان کو ایس ایس پی تشدد کیس میں بھی بری کر چکی ہے۔

واضح رہے کہ 2014 دھرنے کے دوران عمران خان اور پی ٹی آئی رہنماؤں کے خلاف دہشتگردی کی دفعات کے تحت مقدمات درج کیے گئے تھے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >