ڈاکٹر عافیہ صدیقی نےرحم کی اپیل پر دستخط کر دیے،بابر اعوان

مشیر پارلیمانی امور بابر اعوان کا کہنا ہے کہ پہلے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو رحم کی اپیل دائر کرنے پر تحفظات تھے لیکن اب انہوں نے رحم کی اپیل پر دستخط کر دیے ہیں، جیل حکام کی جانب سے درخواست امریکی صدر کو بھیجی جا رہی ہے، اس رحم کی درخواست کے ذریعے راستے کھلے ہیں۔

سینیٹ اجلاس میں وقفہ سوالات کے دوران ڈاکٹر بابر اعوان نے بتایا کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو ای میل رسائی حاصل ہے، وہ اس کے ذریعے اپنے خاندان اور کونسل سے رابطے میں رہیں،عافیہ صدیقی سے چوبیس ستمبر کو قونصل جنرل ہوسٹن کی ملاقات کا اہتمام کیا گیا تھا،

اور کئی مرتبہ ایمبسی ٹیلی فون پر بات کی، تاہم خاندان سے ٹیلی فون پر بات کرنے کا مجھے علم نہیں میں ہوسٹن کے سفارت خانے کے ذمے لگا سکتا ہوں کہ وہ انکے گھر والوں سے ڈاکٹر عافیہ صدیقی کا رابطہ کرا دیں ،انہوں نے کہا کہ ڈاکٹر عافیہ صدیقی کو حوالے کرنے والوں کے خلاف بالکل کارروائی ہو سکتی ہے، عافیہ صدیقی اور ایمل کانسی سب کو حوالے کرنے والے کو آپ عدالت لے جا سکتے ہیں۔

وزرات خارجہ نے تحریری جواب میں بتایا کہ کورونا وائرس کی وجہ سے فیڈرل میڈیکل سینٹر کارسویل carswell میں جیل حکام کی جانب سے کونسلر ملاقاتیں معطل کر دی گئی ہیں،جواب میں بتایا کہ 24 ستمبر کو قونصلر جنرل سے ملاقات میں بات چیت کےدوران عافیہ نے بتایا کہ ان کا کورونا ٹیسٹ منفی آیا ہے، جب کہ انہوں نے بتایا کہ ماہر نفسیات نے ان کا حال میں ہی معائنہ کیا تھا، اور ان کو ماہر نفسیات نے ذہنی حوالے سے صحت مند قرار دیا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >