پاکستان جی 20 ممالک سے قرضوں میں بڑا ریلیف لینے میں کامیاب

پاکستان کو قرضوں سے ریلیف کی شکل میں 80 کروڑ ڈالرز کا فائدہ

کچھ عرصہ قبل جی 20 میں شامل ترقی یافتہ ممالک کے حوالے سے یہ بات سامنے آئی تھی کہ ان کی جانب سے غریب یا ترقی پذیر ممالک کو کورونا کے باعث قرضوں میں ریلیف دینے کا ارادہ ظاہر کیا گیا ہے۔

اسی پروگرام کے پیش نظر پاکستان نے رواں سال مئی تا دسمبر2020 کے قرضوں میں ریلیف کے لئے 16 ممالک سے 36 معاہدے کر لیے ہیں۔معاہدوں کی تکمیل سے پاکستان کو 80 کروڑ ڈالر کا فائدہ پہنچے گا۔

اب تک پاکستان نے چین سے 34 کروڑ 70 لاکھ ڈالر، امریکا سے 12 کروڑ 83 لاکھ ڈالر، فرانس سے 17 کروڑ اور جرمنی سے 8 کروڑ 61 لاکھ ڈالر، سویڈن سے ایک کروڑ 44 لاکھ اور کینیڈا سے 80 لاکھ ڈالر کا قرض ریلیف حاصل کر لیا ہے۔

مزید ایک ارب ڈالرز کے ریلیف کے لیے ابھی پاکستان کے 5 ممالک سے مذاکرات جاری ہیں۔ اس مرحلے میں جن 5 ممالک سے ریلیف کی تیاری کی جارہی ہے ان میں روس، جاپان، برطانیہ، متحدہ عرب امارات اور سعودی عرب سے شامل ہیں۔
امید کی جا رہی ہے کہ یہ مذاکرات 31 دسمبر تک کامیابی کے ساتھ معنی خیز ثابت ہوں گے۔

پاکستان نے امریکا کے ساتھ 9، چین کے ساتھ 8، بیلجیئم، کینیڈا، اسپین، نیدرلینڈز، جرمنی کے ساتھ 2، 2، آسٹریلیا، فن لینڈ، فرانس، اٹلی، جنوبی کوریا کے ساتھ ایک، ایک، کویت، ناروے، سوئٹزرلینڈ اور سویڈن کے ساتھ ایک، ایک معاہدہ مکمل کر لیا ہے۔

آئندہ سال جنوری تا جون 2021 میں پاکستان کو مزید 80 سے 90 کروڑ ڈالر کے قرض ریلیف کی توقع ہے. حکومت اس کے لیے بھی بھرپور کوشش کر رہی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >