جہانگیر ترین کی شوگر ملز کو آڈٹ کے لیے منتخب کرنے کا نوٹس معطل

لاہور ہائی کورٹ سے جہانگیر ترین کی شوگر ملز کو آڈٹ کے لیے منتخب کرنے کا نوٹس معطل، ایف بی آر سے جواب طلب

خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق لاہور ہائی کورٹ کے جج جسٹس جواد حسن نے جہانگیر ترین کی جے ڈی ڈبلیو شوگر ملز کی درخواست پر سماعت کی، ایڈووکیٹ شہزاد عطاالہی درخواست گزار کی جانب سے لاہور ہائی کورٹ میں پیش ہوئے۔

ایڈووکیٹ شہزاد عطاالہی کا عدالت میں پیش ہوکر عدالت کو بتانا تھا کہ وہ باقاعدگی سے انکم ٹیکس ادا کرتے ہیں ،ان کی ملز کسی قسم کی نادہندہ نہیں ، ایف بی آر نے یکے بعد دیگرے انکم ٹیکس کی ریکوری کے تین نوٹس بھیجے ہیں، انکم ٹیکس کی عدم ادائیگی کے الزام پر ان کی ملز کو آڈٹ کیلئےمنتخب کیا گیا ہے، قانون کے مطابق ان لینڈ ریونیو کو شوگر ملز کے گزشتہ سالوں کا آڈٹ کرنے کا اختیار نہیں ہے۔

وکیل کا  عدالت سے درخواست کرتے ہوئے کہنا تھا کہ ایف بی آر کو جہانگیر ترین کی شوگر ملز کو آڈٹ کے لیے منتخب کرنے کا نوٹس معطل کرتے ہوئے ایف بی آر کو کاروائی کرنے سے روکا جائے اور ایف بی آر کی جانب سے جاری کیے گئے 16ستمبر، 29ستمبر اور 22 اکتوبر کے نوٹسز معطل کیے جائیں، جس پر عدالت نے حکم امتناعی جاری کر کے ایف بی آر سمیت دیگر سے جواب طلب کر لیا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >