پنجاب کابینہ میں بڑے پیمانے پر تبدیلیوں کا امکان

پنجاب کابینہ میں تبدیلی کا امکان ہے، کابینہ میں کچھ نئے چہرے شامل کیے جائیں گے اور کچھ وزرا سے وزارتیں واپس لیے جانے کا بھی امکان ہے۔

اٹک سے رکن صوبائی اسمبلی یاور بخاری کو پنجاب میں اہم ذمہ داریاں دینے کا فیصلہ کرلیا گیاہے۔اُنہیں وزارت قانون، وزارت داخلہ یا لوکل باڈیز میں سے کوئی وزارت دیے جانے کا امکان ہے۔

یاور عباس بخاری پبلک اکاؤنٹس کمیٹی ٹو کے چیئرمین بھی ہیں، یاور عباس بخاری حلقہ پی پی 1 اٹک سے منتخب ہوئے تھے۔

ذرائع کے مطابق یاور عباس بخاری کے علاوہ نواب غزین عباسی، مسرت چیمہ کو کابینہ میں شامل کیا جاسکتا ہے۔نواب غزین عباسی کا تعلق بہاولپور کے حلقہ پی پی 253 سے ہے

یاور بخاری، وزیر اعظم عمران خان کے معاون خصوصی ذلفی بخاری کے تایا زاد بھائی ہیں اور وہ 2013 کے الیکشن میں بھی تحریک انصاف کے ایم پی اے منتخب ہوچکے ہیں۔

ذرائع کے مطابق خاتون ایم اپی اے مسرت جمشید چیمہ کا بھی کابینہ میں شمولیت کا امکان ہے۔ایم پی اے مسرت جمشید چیمہ کا تعلق لاہور سے ہے اور وہ پی ٹی آئی رہنما جمشید چیمہ کی اہلیہ ہیں۔

ذرائع کا کہنا ہے کہ وزیر قانون راجہ بشارت سے واپس لی گئیں وزارتیں بھی دوسرے وزرا کو دی جائیں گی۔ راجہ بشارت کے بلدیات کی اہم وزارت بھی ہے۔

اسکے علاوہ سوشل ویلفیئر اور بیت المال کی وزارتیں بھی دوسرے وزرا کو سونپی جائیں گی جبکہ کابینہ میں کچھ وزرا سے کارکردگی کی بنیاد پر وزارتیں واپس لیے جانے کا بھی امکان ہے۔

وزیراعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے کابینہ میں تبدیلی کی منظوری دے دی ہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>