حکومت اور مسلم لیگ ق میں اختلافات دور، وزیراعظم اور چوہدری برادران ملاقات کی اندرونی کہانی

وزیراعظم عمران خان اور چوہدری برادران کے درمیان گزشتہ روز لاہور میں ملاقات ہوئی ، ذرائع کا کہنا ہے کہ ملاقات کے دوران حکومت اور مسلم لیگ ق میں دوریوں کے اثرات زائل ہوگئے ہیں۔
خبر رساں اداروں کی رپورٹس کے مطابق گزشتہ روز وزیراعظم عمران خان مسلم لیگ ق کے سربراہ چوہدری شجاعت حسین کی عیادت کیلئے ان کے گھر پہنچے، ملاقات کےد وران وزیراعظم نے چوہدری شجاعت کی صحت کیلئے دعا کی اور کہا کہ آپ مجھے پرویز الہیٰ کی طرح اپنا بھائی سمجھیں۔
رپورٹس کے مطابق دونوں رہنماؤں کے درمیان غلط فہمیوں کو دور کیا گیا اور سیاسی تعلقات کو برقرار رکھنے پر اتفاق کیا گیا، چوہدری شجاعت حسین نے عمران خان سے شکوہ کرتے ہوئے کہا کہ ایسا لگتا ہے آپ کے اردگرد کے لوگ آپ تک صحیح بات نہیں پہنچاتے، آپ پرویز الہیٰ سے براہ راست بات کرلیا کریں۔

اس کے جواب میں عمران خان نے کہا چوہدری صاحب آپ بے فکر ہوجائیں ہم مل جل کر کام کریں گے، چوہدری شجاعت حسین نے کہا کہ آپ چل کر ہمارے گھر آگئے ہمیں آپ سے کوئی شکوہ نہیں ہے، ہم نے اکھٹے الیکشن لڑا تھا 5 سال تک اس حکومت کے ساتھ کھڑیں رہیں گے۔
ملاقات کے دوران ہلکی پھلکی گفتگو بھی ہوئی ایک موقع پرچوہدری شجاعت حسین نے کہا کہ میں آپ کی پہلی والی شادی پر آنا چاہتا تھا مگر آپ نے مجھے مدعو نہیں کیا،اس بات پر سب نے قہقہے لگادیئے، عمران خان نے کہا کہ حیرت ہے آپ کو اتنی پرانی بات یاد ہے تو چوہدری شجاعت نے کہا کہ میں باتیں اچھی طرح یاد رکھتا ہوں۔

میڈیا رپورٹس کے مطابق ملاقات کے دوران مونس الہی ٰ کے معاملے پر کوئی بات نہیں ہوئی، تاہم ذرائع اس بات کی تصدیق کررہے ہیں چوہدری برادران کے تمام تر شکوے اور غلط فہمیاں دور ہوگئی ہیں ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >