سپریم کورٹ کے پریشر پر ام رباب کے دادا، والد اور چچا کے قتل کا مرکزی ملزم گرفتار

سکھر: سندھ پولیس کی کامیاب کارروائی، ام رباب کے دادا، والد اور چچا کے قتل کا مرکزی ملزم گرفتار

میڈیا رپورٹس کے مطابق ایک سندھ پولیس نے کامیاب کارروائی کرتے ہوئے ام رباب کے والد، دادا اور چچا کے قتل کے مرکزی ملزم زلفقار چانڈیو کو بلوچستان سے کشمور میں منتقل ہوتے ہوئے گرفتار کرلیا، تہرے قتل کے مرکزی ملزم ذوالفقار چانڈیو کی گرفتاری پر دس لاکھ روپے کا انعام بھی رکھا گیا تھا۔

ام رباب کے والد، دادا اور چچا کے قتل کے مرکزی ملزم ذوالفقار چانڈیو کی گرفتاری سپریم کورٹ کے دباؤ پر عمل میں لائی گئی ہے۔

خیال رہے کہ 17جنوری 2018 کو دادو کی تحصیل میہڑ میں مبینہ طور پر فائرنگ کرکے ام رباب کے والد، دادا اور چچا کو بے رحمی سے قتل کر دیا گیا تھا، قتل کا مرکزی ملزم ذوالفقار چانڈیو واقعے کے بعد سے اب تک پولیس کی پہنچ میں نہیں آ سکا تھا۔

واضح رہے کہ گزشتہ ماہ 12اکتوبر کو اسلام آباد سپریم کورٹ میں ازخود نوٹس کیس کی سماعت کے دوران چیف جسٹس، جسٹس گلزار احمد نے ریمارکس دیے تھے کہ پولیس کے بڑے بڑے افسران ملزمان کے آگے بے بس ہیں، کیا ملزمان پولیس اور ریاست سے زیادہ طاقتور ہیں؟ کیا حیدرآباد پولیس کی ساری نفری بیکار ہے؟

چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس گلزار احمد نے ملزمان کی عدم گرفتاری پر شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے پولیس کو فوری طور پر ملزمان کی گرفتاری عمل میں لانے کی ہدایت کی تھی۔

 

  • شکر ہے سپریم کورٹ کو عام لوگوں کو داد رسی کا خیال بھی آیا
    اب مجرمُ کو سزا اور منتقی انجام تک بھی پہنچنا چاہئے کیونکہ مجرمُ کے پالتو چانڈیو جا رشتہ دار ہے اور سندھ پولیس زرداری کے کسی پالتو کتے پر ہاتھ نہیں ڈالتی


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >