پاکستان میں مقامی سطح پر اسمارٹ فونز کی تیاری کے لیے 2 چینی کمپنیوں کے ساتھ معاہدے

 

صوبائی وزیر اسلم اقبال نے بتایا کہ موبائل مینوفیکچرنگ کے پاکستان میں کام کرنے اور پلانٹ لگنے سے موبائل مقامی سطح پر ہی تیار ہوں گے۔ انہوں نے کہا کہ ہم چینی کمپنیوں کے اشتراک سے اسمارٹ فون کے مینوفیکچرنگ پلانٹ منصوبے کا خیر مقدم کرتے ہیں۔

میاں اسلم اقبال نے یہ بھی کہا کہ ہماری حکومت کی سرمایہ کار دوست پالیسیوں کے باعث ملکی وغیر ملکی سرمایہ کار پنجاب کا رخ کررہے ہیں۔ تفصیلات بتاتے ہوئے صوبائی وزیر نے کہا کہ ابتدائی طور پرچینی کمپنیاں منصوبے میں 10 ملین ڈالر کی سرمایہ کاری کریں گی۔ جس سے مینوفیکچرنگ پلانٹ چلنے سے موبائل فون مقامی سطح پر ہی تیار ہوں گے۔

انہوں نے یہ بھی کہا کہ لاہور میں 2 چینی کمپنیوں کے مابین اشتراک کار کا معاہدہ طے ہوا ہے۔ یہ چینی کمپنیاں فیصل آباد میں اسمارٹ فون کی مینوفیکچرنگ کا پلانٹ لگائیں گی۔

یاد رہے کہ انجنیئرنگ ڈویلپمنٹ بورڈ نے فروری2020 میں موبائل ڈیوائس کی مینوفیکچرنگ پالیسی کی منظوری دی تھی۔ پالیسی سے مقامی سرمایہ کاری اور غیر ملکی براہ راست سرمایہ کاری کو فروغ ملا ہے۔ کیونکہ ایک اندازے کے مطابق پاکستان میں سالانہ 3 کروڑ 40 لاکھ موبائل فون فروخت ہوتے ہیں۔

پاکستان میں موبائل کی مینوفیکچرنگ سے تقریباً 2 لاکھ افراد کے لیے روزگار کے مواقع پیدا ہوں گے اور ملک عالمی سطح پر سپلائی چین کا حصہ بن سکے گا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >