پاکستان اسٹیل ملز نے اپنے4ہزار سے زائد ملازموں کو نوکری سے برطرف کر دیا

پاکستان اسٹیل ملز کے ترجمان کی جانب سے اعلامیہ جاری کیا گیا جس کے مطابق مختلف شعبوں میں کام کرنے والے گروپ 2، 3، 4 اور جے او سیز ملازمین کو نوکریوں سے برطرف کر دیا گیا ہے۔

اعلامیے کے مطابق ڈی سی ایز، ایس ای ڈی، جی ایم اور مینیجرز کو فارغ کردیا گیا ہے۔ جس کے لیے ان تمام ملازمین کے لیٹرز ان کے رہائشی پتوں پر ارسال کرنے کا عمل شروع کردیا گیا ہے۔

جبکہ پاکستان اسٹیل ملز کے تحت کام کرنے والے اساتذہ، لیکچررز، اسکولوں اور کالجوں کا غیر تدریسی عملہ، ڈرائیورز، فائرمین، آپریٹرز، صحت عامہ اور سیکورٹی اسٹاف، چوکیدار، مالی، پیرا میڈیکل اسٹاف، باورچی، آفس اسٹاف، فنانس ڈائریکٹوریٹ کا عملہ، اے اینڈ پی ڈائریکٹوریٹ اور اے اینڈ پی ڈپارٹمنٹ کے لوگوں کو ضرورت کے تحت ملازمتوں پر برقرار رکھا گیا ہے۔

اس کے علاوہ سی ای او سیکریٹریٹ، اسٹیل مل اسپتال، ایجوکیشن ڈپارٹمنٹ، پروفیشنل ڈگری ہولڈرز، سی ڈی بی، پروٹول اور زونل آفس اسلام آباد سمیت لازمی سروس کے محکمہ جات میں تعینات ملازمین کو بھی برقرار رکھا گیا ہے۔

یاد رہے کہ گزشتہ ہفتے اقتصادی رابطہ کمیٹی (ای سی سی) کے اجلاس میں پاکستان اسٹیل ملز کے ملازمین کی تعداد میں کمی کا عمل شروع کرنے کے لیے 19 ارب 65 کروڑ 60 لاکھ روپے کی تکنیکی ضمنی گرانٹ کی منظوری دی گئی تھی۔

اس سے قبل جون میں وفاقی کابینہ نے اقتصادی رابطہ کمیٹی کے فیصلے کی توثیق کرتے ہوئے پاکستان اسٹیل ملز کے تمام ملازمین کو برطرف کرنے کی منظوری دی تھی لیکن اس معاملے پر شدید احتجاج کیا گیا تھا۔ای سی سی نے 3 جون کو پاکستان اسٹیل ملز کے 9 ہزار 350 ملازمین (100فیصد) کو برطرف کرنے کی منظوری دی تھی۔

پاکستان اسٹیل ملز کے ملازمین نے برطرفی کے فیصلے کو سپریم کورٹ میں چیلنج کیا گیا میں جمع کرائی گئی رپورٹ میں بتایا گیا تھا کہ ملازمین کی برطرفی کا فیصلہ 15 اپریل کو ہیومن ریسورس بورڈ کے اجلاس میں ہوا۔ رپورٹ میں اقرار کیا گیا تھا کہ پاکستان اسٹیل ملز کے 8 ہزار 884 میں سے 7 ہزار 784 ملازمین کو فارغ کرنے کا فیصلہ ہوا تھا۔

رپورٹ میں کہا گیا تھا کہ موجودہ اور سابق ملازمین کو 40 ارب کی ادائیگیاں واجب الادا ہیں جبکہ سال 2009 سے 2015 تک بھاری نقصان پر اسٹیل ملز کو بند کرنا پڑا۔

  • Main nain Vote PTI ko diya tha.. laiken Lanat hai es beghairat Hakoomat per jis nain en mushkil halat main roozgaar cheen liya. Es se tu N.league aur PPP Govt achi thi jinhon nain kisi ki roozi pe laat nai mari.

  • Finally a govt that is ready to take tough decisions. Need to raise gas and electric prices as well otherwise people will continue wasting these resources. Direct cash subsidy to poor can be given through Ehsas database instead of electric and gas bills.

      • This package is very generous. These people have not done any work for 5+ years and drawing salary/pension all these years. Now an additional 2 years pay has been arranged. Yes it is unfortunate these workers lost job but businesses close down all the time and people get fired!

        Most people complaining are tax thieves because honest tax payers would never allow their tax money to be wasted like this.

  • Over 9000 empolyees doing nothing for over 5 years but getting paid this Eid couldnt last for ever. Rest of us 220 millions cant afford to keep them paying for work they cant do. Since 2008 PSM has cost a poor country billions just imagine what could have been achieved by this money in Karachi. Water transport cleaning streets schools etc.

  • Siasat.pk should engage reporters having professional integrity who disseminate accurate news.. There are too many wrong or misleading news and the focus seems on sensationalism .
    If siasat.pk is to establish it for a reliable brand and alternative in daily news, it should focus on quality and professionalism.
    Apparently, there are some sponsored blogs as well which is alright if it is rightly mentioned and is not over done.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >