لاہور کی رہائشی خاتون کے قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم پر سنگین الزامات

پاکستان کی قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کو مشکل میں پھنس گئے۔ لاہور کے رہائشی حامزہ کی جانب سے پریس کانفرنس کے دوران قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابراعظم پر سنگین نوعیت کے الزامات لگائے گئے ہیں۔

لاہور کی رہائشی حامزہ کا اپنی پریس کانفرنس میں بابر اعظم پر الزامات لگاتے ہوئے کہنا تھا کہ بابر اعظم اور میں ایک ہی محلے میں رہتے تھے اور ہم دونوں کلاس فیلو بھی تھے، بابر اعظم سے میرا تعلق اس کے کرکٹ میں آنے سے پہلے کا ہے۔

قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان پر الزامات کی بوچھاڑ کرتے ہوئے لاہور کی رہائشی حامزہ کا کہنا تھا کہ میرا اپنا سیلون تھا اس سیلون سے مجھے جتنی بھی انکم آتی تھی وہ میں بابر اعظم کو دیتی رہی ہوں۔

انہوں نے بابر اعظم پر الزامات لگاتے ہوئے مزید کہا کہ بابر اعظم نے 2010 میں مجھے گھر آکر پرپوز کیا تھا جسے میں نے قبول کر لیا تھا اور 2011 میں بابر اعظم کورٹ میرج کے نام پر مجھے گھر سے بھگا کر لے گیا تھا لیکن اس نے مجھ سے شادی نہیں کی اور شادی کے نام پر مجھے دھوکہ دیا ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان کی قومی کرکٹ ٹیم کے کپتان بابر اعظم کی سربراہی میں قومی کرکٹ ٹیم کا سکواڈ اس وقت نیوزی لینڈ کی کرکٹ ٹیم کے ساتھ ٹی ٹوئنٹی، ون ڈے اور ٹیسٹ میچز کی سیریز کھیلنے کے لیے نیوزی لینڈ میں قرنطینہ میں ہے، جنہیں قرنطینہ کی مدت پوری کرنے کے بعد ٹوئنٹی، ون ڈے اور ٹیسٹ میچز کی سیریز کھیلنی ہے۔

  • sorry lady …. both of you lived a life of sin. First she got pregnant without being married and then got an abortion. Was she forced? Why did she ran away and lived with him for so many years without being married and now he does not want to marry her and she has an issue.

  • means 2010 mein jab wo 16 ka tha aue 17 saal ki umer mein bhaga ker le gaya tha? Ab kiun yaad aya ? 4 saal pehle kiun nahin jab babar ne debut kia tha , ab jab babar bilkul apne career ke prime per hai phir baat kiun baher ai?

  • 10 saal bad yad aaya. LOLZZZ

    Also there is another technical issue. Baber Azam is only 26 years old now. Which means that he was only 16 years of age 10 years ago. How could be perform court marriage then?

  • Lanat ha in sahafion par. Babar Azam "star” had hoti ha star honay ka matlab ye to nai logon ki larkion k sath zna kray aur hum us ko muqadas ga’ay smjtay rhain. He should be expelled from team. Is trha k haramion ko team main rkhnay ka koi faida nai. bray ay aur chlay gay lakin Pakistani team qaim o daim ha Babar Azam team se nikl jay ga tab bhi team acha hi perform kray gi.

  • اب جب بابر اعظم کا نام بن گیا ہے تو یہ گھٹیا عورت صرف پیسے کے لئے اپنی عزت سب کے سامنے بیچ رہی ہے ۔۔لعنت ہے ایسی عورتوں پے ۔۔تھو

  • Typical mentality of a man to trap a female use her then dump her and sadly with full consensual sex between the two nothing can be done to punish the man. No law with out criminal intent based evidence is a dead issue. If you want insaaf pray to allah other ways vengeance is illegal n criminal. islamic republic of pakistan and its culture n religion strictly prohibits sexual relations before marriage if u do say yes to illegal arrangement means you deserve it sadly. Sad but true if anbody does big gunnah.

  • According to his records Babar was born on 15 Oct 1994. In 2010 he was 16 years old. To purpose her, he must have been dating her for a while. Was he dating her when he was 13/14!!
    Even 16 years old are not so stupid and desperate that they would take a girl out of her house and then rent in places like DHA Lahore.
    What is this story!!

  • Utter rubbish, Babar Azam was hardly 16, ten years ago and this lady must be in the mid-20s as her current age looks in mid-30s. Supposedly this story is true then this lady should be indicted for having sexually grooming a minor

  • Na tuo Baber azem itna chunna kaka hay aur na he ye larki. Reh gai baat 10 saal say tuo ye mumkin hay aisa hua huo. Ye jitnay cricketers hain ye apni age theek nahi likhwatay . Baber azem doodh Peeta bacha nahi hay. Aur mairay bhaio ye baber azem ki itni himayat karna band karo. Wo koi naik aur itna shareef nahi hoga. Baishuk larki nay burrai ki hay aur galat rasta apnaya laikin hum uski in tamam batoon ko ignore nahi kar saktay . Jin western culture to pakistani apnany ki aur wahan rehnay ko apna fakher samajhtay hain us culture main aisa koi scandal ajay tuo iss baat ko bohet serious lia jata hay aur mazloom ki favor ki jati hay aur star ki class li jati hay . Hamary mulk main ulta kanoon hay, bay wajah ki himayat ho rahi hay baber azem ki jaisay wo farishta huo . Larki koi parsa nahi jo apnay ghar waloon ko chorr sakti hay wo kuch bhi kar sakti hay laikin iss auret ki baat ko ignore bhi nahi kia ja sakta . Inquiry zaroor honi chahiay aur jootay dono ko purnay chahiay .

  • دراصل یہ کہہ رہی ہے کہ ہم دونوں دس سال تک زنا کرتے رہے ہیں۔ یعنی جب سے انہوں نے یہ کام شروع کیا تو اس وقت بابر کی عمر سولہ سال تھی۔ دونوں کے والدین کو بھی اس پر کوئی اعتراض نہی ہوا کہ یہ دونوں الگ سے رہ رہے ہیں اور زنا کی زندگی گزار رہے ہیں جبکہ دونوں ہی ابھی بچے تھے۔ کیسے لوگ ہیں یہ۔ کم از کم یہ لڑکی کو ہی کچھ شرم ہوتی کہ اگر وہ تجھ سے اب شادی سے انکاری ہے تو کیا تیرے میڈیا میں آنے سے وہ تجھ سے شادی کر لے گا۔ اس پریس کانفرنس کے بعد کیا تیری کچھ عزت بچتی ہے کہ جہاں تو ساری دنیا کے سامنے زنا کا اقرا کر رہی ہے اور حرام کے بچے کے اسقاط کا بھی۔ لغ لعنت۔ بہت ہی نیچ لوگ ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >