ملتان:کارکنوں کے خلاف نہیں بلکہ اکسانے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی،فردوس عاشق

وزیر اعلی پنجاب سردار عثمان بزدار کی معاون خصوصی برائے اطلاعات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کا راولپنڈی پریس کلب میں میڈیا کے نمائندوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کرونا وائرس کی جان لیوا وبا نے اس وقت پاکستان میں پنجے گاڑ دیے ہیں حکومت اور عدالتیں کرونا وائرس  کو شکست دینے کے لیے فیصلے کر رہی ہیں جبکہ اپوزیشن جماعتوں کا اتحاد پی ڈی ایم عدالتی حکم کا جنازہ نکال کر ملتان میں دھرنا دینے پر بضد ہے۔

صوبائی وزیر اطلاعات کا کہنا تھا کہ کچھ نادان دوستوں کی جانب سے ملتان میں بھائی چارے کی فضا کو خراب کیا گیا ہے اور اپنے خلاف مقدمات سے پیچھا چھڑانے کے لئے ملتان کی عوام کو مقدمات میں پھنسانا چاہتے ہیں، ملتان میں شرپسند عناصر قانون کے منہ پر طمانچہ مار کر ریاست کی رٹ کو چیلنج کر رہے ہیں، ان کم عقل اور کم ظرف لوگوں کو یہ معلوم ہونا چاہیے کہ شر پسند عناصر کے خلاف نمٹنے کے لیے حکومت کے پاس آئینی اور قانونی تحفظ موجود ہے۔

انہوں نے کہا کہ حکومت  قانونی تحفظ کو استعمال کرکے شرپسند عناصر کو روکنے کی طاقت رکھتی ہے لیکن حکومت عوام پر تشدد کر کے کبھی خوش نہیں ہو سکتی، قانون شرپسندوں سے نمٹنے کے لئے اپنا راستہ بنانے جا رہا ہے، شرپسند عناصر حکومتی رٹ کو چیلنج کر رہے ہیں، جو افراد ملتان اسٹیڈیم کے تالے توڑیں گے ہم ان کے ہاتھ توڑ دیں گے کیونکہ قانون سے بالاتر کوئی بھی نہیں ہے۔

فردوس عاشق اعوان کا کہنا تھا کہ ن لیگ والوں کے گھر ماں کا جنازہ پڑا ہے لیکن ان کی جانب سے صف مرگ پر بھی نفرت کی آگ بھڑکائی گئی ہے، دو بچے قانون کی دھجیاں اڑا کر ابو بچاؤ تحریک چلا رہے ہیں اور اس تحریک میں ایندھن کے طور پر قوم کے بچوں کو استعمال کر رہے ہیں۔

خود تو یہ اشرافیہ کرو نا ایس او پیز پر عمل درآمد کرتی ہے یہاں تک کہ اپنے گھر میں ہونے والی تقریب کیلئے کرونا کا ٹیسٹ لازمی قرار دیا گیا جبکہ دوسری جانب اپنے مقاصد حاصل کرنے کے لیے عوام کو موت کے اندھے کنویں میں دھکیلا جا رہا ہے۔ ملتان میں کارکنوں کے خلاف نہیں بلکہ انہیں اکسانے والوں کے خلاف کارروائی ہوگی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >