بھارت 5 اگست 2019 کے بعد سے کمزور پوزیشن پر ہے :ترجمان پاک فوج کا گلوبل ویلیج اسپیس کو انٹرویو

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کا خبر رساں ادارے کو انٹرویو بھارت سے متعلق چشم کشا انکشافات

ڈائریکٹر جنرل انٹر سروسز پبلک ریلیشنز پاکستان میجر جنرل بابر افتخار نے ایک خبر رساں ادارے کو انٹرویو دیا جس میں انہوں نے بھارت سے متعلق ایسے آنکھیں کھول دینے والے حقائق بیان کیے جس سے کوئی انکار نہیں کر سکتا۔

میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ بھارت5 اگست 2019 کے بعد سے کمزور پوزیشن پر ہے، بھارت نے 5 اگست کو مقبوضہ کشمیر میں غیر قانونی اقدامات کئے، اس کے بعد پاکستان کی جانب سے بھارتی دہشت گردی کو ایکسپوز کرنے کے حوالے سے دیئے گئے ڈوزیئر میں ہم نے مکمل طور پر دنیا کو بتایا کہ بھارت ہے کیا، ڈوزئیر کو پی فائیو اور سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کو پیش کیا گیا۔

پاک فوج کے ترجمان میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر سے توجہ ہٹانے کیلئے ایل او سی کی خلاف ورزیاں کرتا ہے ،بھارت فالس فلیگ آپریشنز اور ایسے ڈرامے رچاتا ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے بتایا کہ ناگوروٹا واقعے میں بھارت کچھ نیا نہیں کر رہا ،ناگوروٹا میں کیا ہوا، کیا بھارت نے کوئی انفارمیشن شیئرکی؟مقبوضہ کشمیرمیں جو کچھ ہوتا بھارت اس کا انکاری رہا ہے، پاکستان ہمیشہ حالات معمول کی طرف لانے کا خواہاں ہے۔

انہوں نے گزشتہ ماہ نائیجر میں منقد او آئی سی وزرائے خارجہ اجلاس کا حوالہ دیتے ہوئے کہا کہ او آئی سی کے فورم سے تازہ ترین اعلامیہ سامنے آیا، دنیا اب بھارتی اسپانسرڈ دہشتگردی پر کھل کربات کررہی ہے،بھارتی ریاستی دہشت گردی کے ثبوتوں کو عالمی برادری نے سنجیدہ لیا، پاکستان دہشت گردی میں بھارت کے ملوث ہونے کےثبوت ڈوزیئر میں سامنے لایا ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر نے کہا کہ ہمیں خطےکی صورتحال معمول پر لانے کی ضرورت ہے،سی پیک منصوبہ پورے خطے سے جڑا ہوا ہے، سی پیک پاکستان کا نہیں پورے خطے کی خوشحالی کا منصوبہ ہے، بھارت سمجھتا ہے کہ رکاوٹیں ڈالنے سے یہ منصوبہ رک جائے گا۔

میجر جنرل بابر افتخار نے کہا کہ بھارت کو ڈر ہے سی پیک خطے کا گیم چینجر ہے ،بھارت کی طرف سے سی پیک پہلے سے ہی سیکیورٹی خطرات کا سامنا کر رہا ہے۔

ترجمان پاک فوج میجر جنرل بابر افتخار نے مزید کہا کہ پاکستان کیخلاف افغانستان کی سرزمین استعمال ہونے پر افغان قیادت کو آگاہ کیا، ہم افغان حکومت کو درپیش مسائل کو تسلیم کرتے ہیں ، بھارت افغان سر زمین کو استعمال کر کے سی پیک کو نشانہ بناتا ہے، بھارت کے پاس دہشت گرد ہیں،بھارت سی پیک پر کام کرنے والی مقامی لیبر کو نشانہ بناتا ہے۔

سی پیک سے متعلق ان کا کہنا تھا کہ اس کے تحت بننے والے پراجیکٹس کی سیکیورٹی کیلئے21 ڈویژن فورس تشکیل دی ہے، چینی پارٹنرز سی پیک منصوبے کی سیکیورٹی کے انتظامات سے مطمئن ہیں، سی پیک کو نقصان پہنچانےکی ہر بھارتی سازش کو ناکام بنائیں گے، سی پیک ہر روز پہلے سے زیادہ ترقی کرے گا۔

انہوں نے آخر میں کورونا وائرس سے لڑنے والے فرنٹ لائن ورکرز کے کردار کو سراہا انہوں نے کہا کہ یہ وہ لوگ ہیں جو پہلی لہر میں بھی سامنے سے اور متاثر ہونے کے بعد پھر سب سے آگے کھڑے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اس حوالے سے حکومتی عملی سے مطمئن ہیں۔

میجر جنرل بابر افتخار نے کورونا کے حوالے سے عوام میں شعور بیدار کرنے پر پاکستانی میڈیا کے کردار کو بھی سراہا۔

 

ترجمان پاک فوج نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیرسےتوجہ ہٹانےکیلئےایل اوسی کی خلاف ورزیاں کرتاہے ،بھارت فالس فلیگ آپریشنز اور ایسے ڈرامے رچاتا ہے،ناگوروٹا واقعے میں بھارت کچھ نیا نہیں کر رہا ،ناگوروٹا میں کیاہوا،کیابھارت نے کوئی انفارمیشن شیئرکی؟مقبوضہ کشمیرمیں جوکچھ ہوتابھارت اس کا انکاری رہاہے،پاکستان ہمیشہ حالات معمول کی طرف لانےکاخواہاں ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >