مردان: مدرسے کے ڈرائیور نے 3 بچوں کو بد فعلی کا نشانہ بنا ڈالا

مردان: مدرسے کے ڈرائیور نے 3 بچوں کو بد فعلی کا نشانہ بنا ڈالا

میڈیا رپورٹس کے مطابق خیبر پختونخوا کے علاقے مردان کے ایک مدرسے میں بچوں کے ساتھ بدفعلی کے ایک سکینڈل کا انکشاف ہوا ہے، مدرسے کے تین بچوں کی جانب سے پولیس کو اپنے ساتھ پیش آنے والے بدفعلی کے واقعے کی رپورٹ درج کروائی گئی تھی۔

واقعے کی رپورٹ کے مطابق خیبر پختونخوا کے علاقے مردان کے ایک مدرسے کے ڈرائیور کامران کی جانب سے بچوں کو جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا جاتا تھا، مدرسے کے سوزوکی ڈرائیور کامران کے خلاف زیادتی کا نشانہ بننے والے مدرسے کے تین بچوں نے خود اپنا بیان ریکارڈ کروایا ہے۔

مردان: مدرسے کے ڈرائیور نے 3 بچوں کو بد فعلی کا نشانہ بنا ڈالا

پولیس کی جانب سے درج کی گئی رپورٹ کے مطابق ملزم  کامران خان کی جانب سے جن تین بچوں کو زیادتی کا نشانہ بنایا گیا ہے ان کی عمریں 9 سے 12 سال کے درمیان ہیں، جو ملزم کے ہاتھوں متعدد بار زیادتی کا نشانہ بن چکے ہیں۔

متاثرہ بچوں کا پولیس کو ریکارڈ کروائے گئے اپنے بیان میں کہنا تھا کہ ڈرائیور کامران انہیں متعدد بار اپنی ہوس کا نشانہ بنا چکا ہے ، تھانہ شیخ ملتون نے بچوں کا بیان ریکارڈ کر کے سوزوکی ڈرائیور کامران کو گرفتار کر لیا ہے۔

 

  • ڈرایور کامران نے اپنی ابتدائی رپورٹ میں کہا ہے کہ وہ خود بھی مدرسے کا
    پڑھا ہوا ہے جہاں استادوں نے اس کے ساتھ بھی زیادتی کی تھی تو اب اسے
    اس غلط کام کی عادت پڑ گی ہے جو ظالم چھوٹنے سے بھی نہیں چھوٹتی
    اب اس میں کیا


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >