نواز شریف کی کرپشن بتانے پر براڈ شیٹ سے کس اعلیٰ شخصیت نے کمیشن مانگا؟

وزیراعظم عمران خان کا بڑا اقدام، براڈ شیٹ سے وزیروں اور فوجی جرنیلوں کا ثبوت مانگ لیے۔

صحافی اور کالم نگار رؤف کلاسرا کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے نجی ٹی وی کے ساتھ انٹرویو کے دوران کہا ہے کہ براڈ شیٹ سے اپنے وزیروں اور جرنیلوں کے خلاف جو کرپشن کے الزامات لگائے گئے ہیں اس کے ثبوت مانگے ہیں۔

عمران خان نے براڈ شیٹ کے سربراہ موسوی سے کہا ہے کہ مجھے ان تمام لوگوں کا ریکارڈ چاہیے جو لوگ آپ سے ملاقات کرتے رہے ہیں اور ڈیمانڈز کرتے رہے ہیں۔

رؤف کلاسرا کے مطابق بڑاڈ شیٹ کے چیئرمین کاوے موسوی کے ساتھ ایک موقع پر تمام معاملات طے پا گئے تھے لیکن اس کے باوجود انہوں نے اپنا منہ بند رکھنے کی بجائے پاکستانی صحافیوں کو خصوصی انٹرویو دیتے ہوئے مزید تر مزید انکشافات کیے ہیں۔

انہوں نے کہا کہ پاکستانی عوام اب تک اپنے منہ میں انگلیاں دیکھ کر سوچ رہی ہے کہ ہمارے ساتھ ہو کیا رہا ہے، کیونکہ جو بھی آتا ہے پاکستان کے خلاف دعویٰ دائر کرکے کروڑوں ڈالر لے اڑتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ یہ بہت بڑی بات ہے کہ وزیراعظم عمران خان نے براڈ شیٹ کے ملازم ظفر اقبال سے ملاقات کی تھی، لیکن ساتھ ہی یہ بھی تسلیم کیا کہ انہیں یہ نہیں معلوم تھا کہ ان سے ملاقات کرنے والا شخص غیر ملکی کمپنی براڈ شیٹ کا ہے، وزیراعظم کے علاوہ دوستوں نے بھی اس بات کا اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے بھی براڈ شیٹ کے ملازم ظفر اقبال سے ملاقات کی ہے۔

رؤف کلاسرا نے کہا کہ لندن میں شاہد خاقان عباسی نے انٹرویو دیتے ہوئے اپنے ردعمل میں کہا تھا کہ یہ بہت بڑی بات ہے کہ وزیروں اور جرنیلوں پر کرپشن کے الزامات لگ رہے ہیں لیکن اس کے باوجود کسی کو کوئی فرق نہیں پڑ رہا، لیکن اس کے برعکس عمران خان نے  براڈ شیٹ سے وزیروں اور جرنیلوں کے خلاف ثبوت طلب کرلیے ہیں، لیکن انہوں نے یہ نہیں بتایا کہ وہ اس رپورٹ کا کریں گے کیا؟

انہوں نے کہا کہ یہاں حیران کن بات یہ ہے کہ براڈ شیٹ کی رپورٹ میں 2، 3 جنرلز کے نام بھی سامنے آرہے ہیں ۔ جنہوں نے ظفر علی کے ساتھ ملاقاتیں کی ہیں، جس کا ظفر علی کی جانب سے لکھے گئے خط میں بھی ذکر کیا گیا ہے، جو انہوں نے پاکستان میں سارے معاملے کو دیکھنے والی لا فرم کو لکھا تھا۔

رؤف کلاسرا نے کہا کہ ظفر علی نے دو تین ماہ تک حکومت کے نمائندوں سے ملاقاتیں کرنے کے بعد موسوی کو خط لکھا کہ میری ملاقات ڈی جی آئی ایس آئی اور دیگر اعلیٰ فوجی افسران سے ہوئی ہے۔

ظفر علی کی جانب سے حکومتی حلقوں کو یہ بتایا گیا تھا کہ نواز شریف نے سعودی عرب سے ایک ارب ڈالر کے اثاثے سنگاپور بینک میں ٹرانسفر کیے ہیں اور انہوں نے موسوی کو بتایا کہ جب نواز شریف کے اثاثوں کی منتقلی کی بات فوجی حلقوں تک پہنچی تو انہوں نے یہ سارا معاملہ اپنے ہاتھ میں لے لیا۔

انہوں نے کہا کہ اس میں سب سے اہم بات یہ بھی ہے کہ 13 اکتوبر 2018 کو لندن کی ایک کیفے میں کاوے موسوی سے جنرل مالک ملنے آئے تھے اور یہ کافی پر ملاقات ہوئی تھی اور  وہاں بیٹھے بیٹھے باتوں میں جب نواز شریف کے ایک ارب ڈالر کے اثاثوں کے بارے میں بات ہوئی تو جنرل مالک نے ان سے کہا کہ اگر آپ یہ رقم ریکور کروا دیتے ہیں تو اس میں سے 25 فیصد کے حساب سے 25 کروڑ ڈالر آپ کو کمیشن کے طور پر ملیں گے تو اس میں سے میرا کمیشن کتنا ہوگا؟ جس پر موسوی کی جانب سے ملاقات ختم کر دی گئی۔

  • منافقت دیکھو اس ٤٠-٥٠ لکھ لے کے غریبوں کی آہوں پر مجرا کرنے والی صحافتی مالشئے کی
    دنیا پوچھ رہی ہے پیسہ کس نے لوٹا اور یہ مجرا کر رہا ہے کمیشن مانگنے والوں پر-
    ابے سالے تو کیا کر رہا تھا جب یہ ملک لوٹ رہا تھا؟ تیری دانشوری کہاں تھی اس وقت

  • جنہوں نے لوٹا ہے وہ بےغیرت نمبر دو ہیں
    ایک نمبر بےغیرت گلسڑا جیسے مالشئے جنہوں نے معصوم اور انپڑھ قوم
    کو کنفوز کر کے چوروں کو بھاگنے کا راستہ دیا

  • میڈیا کے حرام خور صحافیوں کا ٹولہ باتیں گھوما پھیرا کر پیش کر رہا ھے جس نے بھی لوٹا ھے اور جنہوں نے ہی بیچ میں روکاوٹیں ڈالیں ہیں یہ سب زمہ دار ہیں۔ میڈیا کے حرام خور کتے باتوں کو گول گول گھما پھیرا کر رھے ھیں میڈیا کے کتوں کو بولنا چاہئے ھے کہ کالی بھیڑیں کیسی بھی طرح سے دھوکے سے حکومت چکر دے سکتے ہیں۔
    جس طرح کالی بھیڑوں نے نیب کے قوانین تبدیل کرانے کی 34 شکوں کو ختم کرانے کی کوششیں کیں پھر ساری بات عمران خان پر ڈال دینی تھی
    ایسی طرح انٹرنیشنل مافیاز کے زریعے انھی نونی لیگ مافیاز نے عمران خان کو رشوت دینے کی کوشش کی اور پھر ہر چیز عمران خان پر ڈال دینی تھی
    اب براڈ شیث کے معاملے میں میڈیا کے کتے ایک مرتبہ پھر معاملات کو گول مول بنا کر پھر الٹا پی ٹی آئی پر ڈال رہے ہیں اسٹیبلشمنٹ کی کالی بھیڑیں اور میڈیا کے حرام خور کتے ان تمام معاملات کو گھوما پھیرا کر پی ٹی آئی پر ہی ڈالنے کی کوشش کرتے ہیں۔
    لکھ لعنت ان حرام خور صحافیوں کے ٹولے پر جو الٹی سیدھی بکواسیات کر رھے ھیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >