الیکشن کمیشن نے 154 ارکان پارلیمنٹ کی رکنیت معطل کردی

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کروانے پر پر وفاقی وزراء سمیت قومی اسمبلی و سینیٹ کے 154 اراکین کی رکنیت معطل کردی ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق الیکشن کمیشن نے مہلت دیئےجانے کے باوجود اثاثوں کی تفصیلات جمع نہ کروانے والے وفاقی وزراء، قومی اسمبلی و صوبائی اسمبلیوں سمیت سینیٹ کے 195 اراکین کی رکنیت معطل کردی ہے۔

الیکشن کمیشن نے تفصیلات جمع نہ کروانے والے 394 اراکین پارلیمنٹ کو 16 جنوری تک کی مہلت دی تھی تاہم تفصیلات جمع نہ کروانے والے103 اراکین صوبائی اسمبلی، 48 اراکین قومی اسمبلی اور 3 سینیٹرز کی رکنیت معطل کرنے کا اعلامیہ جاری کردیا ہے۔

رکنیت معطل ہونے والے اراکین میں وفاقی وزراء فواد چوہدری، فہمیدہ مرزا، علی حیدر زیدی شامل ہیں ، جن اراکین قومی اسمبلی کی رکنیت معطل ہوئی ان میں روحیل اصغر، مائزہ حمید، خالد مقبول صدیقی، محمد خان لغاری، میر خان محمد جمالی قابل ِ ذکر ہیں۔

اس کے علاوہ سینیٹ کے اراکین مصدق ملک، کامران مائیکل، شمیم آفریدی کی رکنیت بھی معطل کردی گئی ہے، صوبائی اسمبلیوں میں سے جن اراکین کی رکنیت معطل ہوئی ان میں سے پنجاب اسمبلی کے52 اراکین، کے پی اسمبلی کے26، سندھ اسمبلی کے19 جبکہ بلوچستان اسمبلی کے 6 اراکین شامل ہیں۔

واضح رہے کہ سینیٹ، قومی اسمبلی اور صوبائی اسمبلیوں کےکل 1 ہزار195 اراکین کو اپنے اثاثوں کی تفصیلات الیکشن کمیشن میں جمع کروانے کیلئے31 دسمبر کی آخری تاریخ دی گئی تھی، 31 دسمبر کے بعد 394 اراکین پارلیمنٹ نے اپنے اثاثوں کی تفصیلات جمع نہیں کروائی جس کے بعد الیکشن کمیشن نے ان اراکین کو ایک بار پھر 16 جنوری تک کی مہلت دی تھی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >