غیر قانونی الاٹمنٹ ریفرنس، نواز شریف کی تمام جائیدادیں قُرق کر لی گئیں، رپورٹ جمع

لاہور احتساب عدالت میں غیر قانونی پلاٹوں کی الاٹمنٹ سے متعلق کیس کی سماعت ہوئی جس میں نیب کے تفتیشی افسر نے میر شکیل کے شریک ملزم سابق وزیراعظم نواز شریف کی پاکستان میں موجود تمام جائیدادوں کے قرق کیے جانے سے متعلق رپورٹ عدالت میں پیش کر دی۔

رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ عدالت حکم کی تعمیل میں نواز شریف کی پاکستان میں موجود تمام جائیدادیں قرق کر لی گئیں ہیں اور اس سے متعلقہ محکموں کی رپورٹس بھی منسلک کر دی گئیں ہیں۔

اس کے بعد عدالت نے جنگ اور جیو گروپ کے مالک میر شکیل پر فرد جرم عائد کرنے کے لیے 28 جنوری کی تاریخ مقرر کر دی، عدالت نے آئندہ سماعت پر شریک ملزم ہمایوں فیض رسول کو بھی طلب کر لیا۔ نیب ریفرنس میں میر شکیل، نواز شریف، سابق ڈی جی ایل ڈی اے ہمایوں فیض رسول اور بشیراحمد کو مجرم قرار دیا گیا ہے۔

اس کیس میں طلبی کے باوجود پیش نہ ہونے پر نواز شریف کو اشتہاری بھی قرار دیا جا چکا ہے۔اسپیشل نیب پراسیکیوٹر حارث قریشی نے عدالت کو بتایا کہ میر شکیل نے اس وقت کے وزیراعلیٰ نواز شریف کی ملی بھگت سے ایک ہی علاقے میں کنال کنال کے 54 پلاٹ ایگزمپشن پر لیے جو کہ ایگزمپشن پالیسی 1986 کی خلاف ورزی ہے۔

حارث قریشی نے کہنا تھا کہ میر شکیل نے نواز شریف کی ملی بھگت سے 2 گلیاں بھی الاٹ شدہ پلاٹوں میں شامل کر لیں اور اپنا جرم چھپانے کیلئے پلاٹ اپنی اہلیہ اور کمسن بچوں کے نام پر منتقل کرا دیئے۔

  • آگر ایک مرتبہ مستقل طور پر نواز شریف مافیاز اور اس کے خاندان کی تمام جائیدادوں کو ریاست پاکستان کے خزانے میں جمع کرا کر عوام کی فلاح وبہبود کے لئے استعمال کی جائے تاکہ آنے والی نسلوں کے لئے نواج شریف کو نشان عبرت کے طور پر پیش کیا جائے کہ زندہ قومیں ملک کو لوٹنے والوں کے ساتھ کیا حشر کرتی ہیں

  • Even if some of these plots are confiscated, they are still enjoying the ill gotten money and are living better than 99% of people in the world. With so much money, protection and facilities, they can say any silly or foolish BS and get away with it. I have a feeling that even if they have to surrender a couple of billion dollars, they will still be having so much of the loot that they damn care. Money can buy everything and they will again buy the processes, systems and findings.
    Not to forget, their partners in crime sitting in our establishment, serving and retired, will not only come to their rescue (which actually they already did) but who knows tomorrow, they may bring him back and declare his innocent from courts and on top of that make a political legend by manipulating next elections for him (or his party).


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >