ایف بی آر کا گوادر ٹیکس فری زون رولز کا مسودہ تیار،ٹیکس پر کسے کتنی رعایت ملے گی؟

ایف بی آر نے گوادر ٹیکس فری زون رولز 2021 جاری کردیئے گئے،جس میں زون کے سرمایہ کاروں کو ٹیکس میں چھوٹ ، مراعات اور ٹیکس مراعات کی وضاحت کی گئی ہے۔ ایف بی آر کے جاری کردہ مسودہ قواعد کے مطابق سی پیک کے تحت گوادر ٹیکس فری زون کیلئے رعایتی شرح ٹیکس اور صفر ڈیوٹی پر مشینری کی درآمد کا فیصلہ کیا گیا ہے،فری زون کے لئے درآمدی سامان کے سلسلے میں سامان کے اعلامیہ کے ساتھ دیگر دستاویزات بھی پیش کی جائیں گی۔

ایف بی آر نے گوادر ٹیکس فری زون رولز کا مسودہ تیار کر لیا ہے،رولز کے تحت سرمایہ کار لائسنسنگ اتھارٹی سے لائسنس حاصل کرنے کے بعد یوزر آئی ڈی اور لاگن پاسورڈ کے لئے درخواست دے سکیں گے،سامان کا اعلامیہ سرمایہ کار ، یا کلیئرنس ایجنٹ کے ذریعہ دائر کیا جانا چاہئے۔ فری زون میں درآمدی سامان کی کسٹم ایکٹ 1969 کی دفعات اور اس کے تحت بنائے گئے قواعد کے مطابق جانچ اور اس کا اندازہ کیا جائے گا۔

کسٹمز ایکٹ اور گوادر پورٹ اتھارٹی آرڈیننس ، 2002 کے تحت دی گئی چھوٹ کا اطلاق پلانٹ ، مشینری ، سازوسامان پر ہوگا جو مکمل طور پر ایک آزاد زون کی حدود میں استعمال ہوگا اور سرمایہ کاروں کے ذریعہ زون میں درآمدی سامان کو استعمال کیا جائے گا۔

ایف بی آر کے مطابق رولز کے تحت سرمایہ کار صفر ڈیوٹی پر پلانٹس اور مشینری منگواسکیں گے تاہم پلانٹس و مشینری کو پانچ سال تک کیلئے ٹیکس فری زون سے باہر معمول کے ٹیرف ایریا میں فروخت نہیں کیا جاسکے گا۔ پانچ سال سے قبل ٹیکس فری زون سے باہر ٹیرف ایریا میں فروخت کی صورت میں ڈیوٹی اور ٹیکس سو فیصد وصول کئے جائیں گے۔

دستاویز کے مطابق تین سال بعد فروخت پر 50 فی صد ڈیوٹی و ٹیکس عائد کئے جائیں گے، اس کے علاوہ پانچ سال کے بعد ٹیرف ایریا میں پلانٹس و مشینری کی فروخت پر صفر ڈیوٹی و ٹیکس عائد ہوگا۔ گوادر پورٹ پر آنے اور جانے والے جہازوں کو فیول اور پیٹرولیم مصنوعات کی سپلائی کی بھی صفر ڈیوٹی عائد ہو گی،رولز کے تحت سرمایہ کار لائسنسنگ اتھارٹی سے لائسنس حاصل کرنے کے بعد یوزر آئی ڈی اور لاگن پاسورڈ کے لئے درخواست دے سکیں گے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>