کالعدم تنظیم کے گرفتار دہشت گرد کے دوران تفتیش حیران کن انکشافات

کالعدم تنظیم کے گرفتار دہشت گرد کے تفتیش کے دوران حیران کن انکشافات

میڈیا رپورٹس کے مطابق شہر قائد میں کاؤنٹر ٹیررازم ڈیپارٹمنٹ کی جانب سے ایک خطرناک دہشتگرد کو خفیہ اطلاع پر کارروائی کرتے ہوئے گرفتار کیا گیا تھا، گرفتار دہشت گرد کی شناخت سرکش عرف سنی کے نام سے ہوئی تھی، جس نے تفتیش کے دوران لرزہ خیز انکشافات کئے ہیں۔

گرفتار دہشت گرد سرکش کا حیران کن انکشافات کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کراچی میں پولیس اور رینجرز پر ہونے والے حملوں میں وہ ایس آر اے کی معاونت کرتا رہا ہے جبکہ کراچی اور اندرون سندھ میں دستی بم حملوں کے احکامات اصغر شاہ سے ملا کرتے تھے، اصغر شاہ سے احکامات ملنے کے بعد اپنے ٹارگٹ کی ریکی کرکے پورا میپ تیار کیا کرتے تھے۔

گرفتار ملزم سرکش عرف سنی کا دوران تفتیش اپنے اعترافی بیان میں کہنا تھا کہ میں نے باقاعدہ بلوچستان اور افغانستان سے جدید اسلحہ چلانے کے لئے ٹریننگ حاصل کی ہے، کالعدم تنظیم کے دہشت گرد کا انکشاف کرتے ہوئے کہنا تھا کہ کراچی اور اندرون سندھ سے تعلق رکھنے والے بارہ افراد میرے لئے کام کر چکے ہیں۔

گرفتار ملزم کا انکشاف کرتے ہوئے کہنا تھا کہ وہ کم عمر لڑکوں کا برین واش کر کے دہشت گردی کی تربیت کے لیے افغانستان بھیجتا رہا ہے، ملزم نے بتایا کہ کراچی اور اندرون سندھ کے مختلف مقامات پر رینجرز اور پولیس پر ہونے والے دستی بم حملوں میں وہ ملوث رہا ہے۔ جبکہ ہماری ٹیم کے چار ساتھیوں کو سی ٹی ڈی پہلے ہی گرفتار کر چکی ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >