کیا اسٹیٹ بینک نے اے ٹی ایم سے پیسے نکلوانے کی کم ازکم حد ایک ہزار کر دی ہے؟

کیا اسٹیٹ بینک نے اے ٹی ایم سے پیسے نکلوانے کی کم ازکم حد ایک ہزار کر دی ہے؟

سوشل میڈیا اور سیلولر نمبروں پر آج کل کچھ پیغامات وائرل ہو رہے ہیں جن میں بینک صارفین یا اکاؤنٹ ہولڈرز سے کہا جا رہا ہے کہ بذریعہ اے ٹی ایم پیسے نکلوانے کی کم از کم حد ایک ہزار روپے مقرر کر دی گئی ہے اور اس سلسلے میں صارفین سے ان کا ڈیٹا طلب کیا جاتا ہے۔

اس مقصد کے لیے لوگوں کو مختلف نمبروں سے پیغامات بھی موصول ہو رہے ہیں جبکہ ایک گروہ سوشل میڈیا پر بھی اس حوالے سے مہم چلا رہا ہے، اس کے متعلق خبر تھی کہ 23 جنوری سے اس نئی پالیسی کا اطلاق کیا جا رہا ہے۔

اسٹیٹ بینک پاکستان نے ان خبروں کی تردید کرتے  ہوئے کہا کہ مرکزی بینک نے اس حوالے سے کوئی ہدایات جاری نہیں کیں۔

ترجمان اسٹیٹ بینک عابد قمر نے کہا کہ اس حوالے سے اگر کوئی پیغام یا خبر وائرل ہے تو وہ سراسر جھوٹ پر مبنی ہے۔ انہوں نے ایسے پیغامات موصول کرنے والوں کو انہیں نظر انداز کرنے کا مشورہ دیا۔

دوسری جانب مختلف بینکوں نے بھی اپنے صارفین کو آگاہی اور فراڈ سے متنبہ کرنے کے میسجز کرنا شروع کر دیے ہیں۔

کیا اسٹیٹ بینک نے اے ٹی ایم سے پیسے نکلوانے کی کم ازکم حد ایک ہزار کر دی ہے؟


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >