وزیراعظم عمران خان کا اقوام متحدہ کی کانفرنس سے خطاب،پانچ مطالبات پیش کر دیے

وزیراعظم عمران خان نے اقوام متحدہ کی چوتھی کانفرنس برائے تجارت و ترقی سے خطاب کے دوران سیکرٹری جنرل اقوام متحدہ کا شکریہ ادا کیا کہ انہوں نے تجارت سے متعلق اہم موضوع پر کانفرنس کا انعقاد کیا، کیونکہ کورونا کے باعث تقریباً سبھی ممالک شدید متاثر ہوئے ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ وہ پاکستان میں کوشش کر رہے ہیں کہ لوگوں کو وائرس اور بھوک دونوں صورتوں میں مرنے سے بچایا جا سکے۔ جس کے لیے حکومتی کی حکمت عملی کام کر رہی ہے اور حکومت کامیاب ہوئی ہے۔ عمران خان نے کہا کہ ہمیں کورونا وائرس کی دوسری لہر پر مکمل طور پر قابو پانا ہوگا۔

اس صورتحال کے لیے وزیراعظم نے 5 نکات پر مشتمل ایجنڈا پیش کرتے ہوئے اس پر عملدرآمد کی ضرورت پر زور دیا۔

1- ترقی پذیر ممالک کے لیے کورونا ویکسین کی مناسب قیمت پر دستیابی کو یقینی بنایا جائے۔

2- کورونا وائرس کے خاتمے تک زیادہ متاثر ہونے والے ممالک کے قرضوں کی ادائیگیوں کو معطل کر کے اضافی قرضوں سے نجات دلائی جائے۔

3- ترقی پذیر ممالک کی ان ضروریات کے لیے 500 بلین ڈالر کا فنڈ قائم کیا جائے جن سے ادائیگیوں کے دباؤ سے پیدا شدہ صورتحال سے نمٹا جا سکے۔

4- کرپٹ سیاستدانوں نے چوری کے پیسوں سے دوسرے ممالک میں بنائے گئے اثاثے ان ملکوں کو واپس دلائے جائیں۔

5- ترقی یافتہ ممالک چھوٹے اور غریب ممالک میں موسمیاتی تبدیلیوں سے پیدا ہونے والی صورتحال پر قابو پانے کے لیے 100 بلین ڈالر کا خصوصی فنڈ مختص کریں۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>