پاک فوج کاشمالی وزیرستان میں آپریشن،دو کمانڈروں سمیت5دہشت گرد ہلاک

شمالی وزیرستان میں ہلاک ہونے والے دہشت گرد کن سنگین کارروائیوں میں ملوث تھے؟

آئی ایس پی آر کے مطابق سیکیورٹی فورسز کے شمالی وزیرستان کے 2 علاقوں میر علی اور خیسور میں خفیہ اطلاعات ملنے کے نتیجے میں کیے جانے والے آپریشن کے دوران 5دہشت گرد مارے گئے جن میں دہشت گردوں کے دو اہم کمانڈر بھی شامل ہیں۔

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے مطابق ہلاک دہشت گردوں میں کمانڈر سید رحیم اور سیف اللہ نورشامل ہیں۔ ان میں سے سید رحیم 2007 سے اب تک 17 دہشت گرد حملوں میں ملوث رہا، کمانڈر سید رحیم وانا اور میرعلی میں خودکش سینٹرز کا انچارج تھا۔

آئی ایس پی آر کے مطابق ملک دشمن ایجنسیوں نے کمانڈر رحیم کو ٹارگٹ کلنگ اور دہشت گرد بھرتی کرنے کا ٹاسک دیا تھا کمانڈر سید رحیم میرعلی کے علاقے میں 4 غیر ملکی اور شمالی وزیرستان میں ایک کمپنی میں کام کرنے والے 3 انجینئروں کے قتل اور کئی حملوں میں ملوث تھا۔

دوسرے کمانڈر سے متعلق آئی ایس پی آر نے بتایا ہے کہ سیف اللہ نور خیسور میں سیکیورٹی فورسز پر آئی ای ڈی حملوں میں براہ راست ملوث تھا۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>