ملائشین عدالت نے پی آئی اے کا طیارہ ریلیز کرنے کا حکم دے دیا

خبر ایجنسی کے مطابق ملائشیا کی ایک عدالت نے پی آئی اے کے بوئنگ 777 طیارے جس کو ملائشیا میں عدالتی حکم پر روک لیا گیا تھا کو ریلیز کرنے کا حکم دے دیا ہے، عدالت نے مذکورہ حکم دونوں فریقوں کے درمیان تنازع کے دوستانہ طریقے سے تصفیے پر راضی ہونے پر دیا ہے۔

خبر رساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ملائشین عدالت میں قومی ایئر لائن کی نمائندگی کرنے والے وکیل کوان ول سین ​​نے کہا کہ پیریگرین پی آئی اے کے خلاف اپنا مقدمہ واپس لینے اور حکم امتناع احکامات کو مسترد کرنے پر رضامند ہوگئی ہے، جس پر کوالالمپور ہائی کورٹ نے طیارے کے قبضے کو فوری طور پر چھوڑنے کا حکم دیا۔

خیال رہے کہ 15 جنوری کو ملائشین عدالت نے طیارے کے کرایہ دار پیریگرین ایوی ایشن چارلی لمیٹڈ کی جانب سے درخواست منظور کرتے ہوئے حکام کو برطانیہ کی ایک عدالت میں پی آئی اے کے ساتھ ایک کروڑ 40 لاکھ ڈالر لیز کے تنازع کے زیر التوا مقدمے کے فیصلے تک طیارے کو گراؤنڈ کرنے کا حکم دیا تھا، جس پر ملائشین حکام نے 15 جنوری کو پی آئی اے کا لیز پر لیا گیا طیارہ بوئنگ 777 تحویل میں لے لیا تھا۔

بعد ازاں ملائیشیا میں تعینات پاکستانی ہائی کمشنر آمنہ بلوچ کا اس حوالے سے میڈیا سے گفتگو میں بتایا تھا کہ ملایا کورٹ، کوالالمپور کے فیصلے کے تحت ملائیشین حکام نے پی آئی اے کا بوئنگ 777 طیارہ تحویل میں لیا ہے، ملائشین عدالت کے یکطرفہ فیصلے کو چیلنج کیا جائے گا اور طیارے کو ریلیز کروانے کی ہر ممکن کوشش کی جائے گی۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>