سنٹرل جیل کراچی میں حلیم عادل شیخ کیساتھ کیا ہوا؟ فوٹیج منظرعام پر

سنٹرل جیل کراچی حکام نے حلیم عادل شیخ کو جیل میں لائے جانے کے بعد پیش آنے والی صورتحال سے متعلق سی سی ٹی وی فوٹیج جاری کر دی جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ غیر معمولی صورتحال پیش آنے پر حلیم عادل شیخ جیل اہلکاروں کے ساتھ بھاگتے ہوئے واپس جا رہے ہیں۔

نجی ٹی وی چینل کے مطابق جیل حکام کی جانب سے 15 منٹ کی ویڈیو جاری کی گئی جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ جب حلیم عادل شیخ کو بیرک کی جانب لےجایا جاتا ہے جس کے بعد ان کو جیل اہلکاروں کے ہمراہ واپس بھاگتے ہوئے دیکھا جا سکتا ہے۔

جیل حکام نے سندھ حکومت کو بتایا کہ جب حلیم عادل شیخ کو بیرک منتقل کرنے کے لیے لیجایا گیا تو قیدیوں نے وزیراعظم عمران خان اور اپوزیشن لیڈر سندھ اسمبلی کے خلاف شدید نعرے بازی کی جس کے بعد حالات کو مدنظر رکھتے ہوئے فوراً حلیم عادل شیخ کو اس جگہ سے نکالا گیا۔

نجی چینل کا دعویٰ ہے کہ جیل سپرنٹنڈنٹ کے مطابق حلیم عادل شیخ پر تشدد نہیں ہوا بلکہ نعرے بازی کی گئی ہے جبکہ مشیر جیل خانہ جات اعجاز جکھرانی کا کہنا ہے کہ 20 سیکنڈز میں انہیں جاتے اور پھر واپس بھاگتے دیکھا جا سکتا ہے اتنی دیر میں تشدد کیسے ہو سکتا ہے۔

جبکہ دوسری جانب میڈیا کا یہ بھی کہنا ہے کہ حلیم عادل شیخ کو جیل لیجانے اور باہر لانے کے دوران 10 منٹ کی ویڈیو ہی موجود نہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >