آئی ایس آئی سربراہ کی تقرری سے متعلق قیاس آرائیاں نہیں ہونی چاہئیں،ڈی جی آئی ایس پی آر

پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ کے ڈائریکٹر جنرل بابر افتخار کا آئی ایس آئی کے سربراہ کی تقرری کے حوالے سے سوشل میڈیا پر گردش کرنے والی خبروں سے متعلق پوچھے گئے سوال کا جواب دیتے ہوئے کہنا تھا کہ ان چیزوں کے بارے میں قیاس آرائیاں نہیں ہونی چاہئیں۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ عام طور پر فوج میں سینئر لیول پر فائز ہونے کے بعد افسر اپنی مدت پوری کرتا ہے، لہٰذا سوشل میڈیا پر آئی ایس آئی کے سربراہ کی تقرری کے حوالے سے گردش کرنے والی خبروں میں کوئی صداقت نہیں ہے۔

پاک فوج کے ترجمان کا دہشت گردوں کی صفائی کے لیے جاری کیے گئے آپریشن ردالفساد کے چار سال مکمل ہونے پر کہنا تھا کہ 2017 میں آرمی چیف جنرل قمر جاوید باجوہ کی قیادت میں شروع ہونے والے آپریشن ردالفساد کا سپاہی ہر پاکستانی ہے۔

ڈی جی آئی ایس پی آر میجر جنرل بابر افتخار کا کہنا تھا کہ دہشت گردوں نے قبائلی علاقوں میں انفراسٹرکچر کی تباہی کے بعد پاکستان کے طول و عرض میں پناہ لینے کی کوشش کی، جسے ناکام بنا دیا گیا، ٹیررازم سے ٹورازم کا سفر انتہائی کٹھن تھا۔

  • بھائی صاحب جو لوگ قیاس آرائیاں کر رھے ہیں ان ملک دشمنوں کو قانون کے مطابق عبرت کا نشان بناؤ۔ سب قیاس آرائیاں ختم ہو جائیں گی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >