جاتی امرا اراضی کیس،مریم نواز کی نیب طلبی

مسلم لیگ ن کی نائب صدر مریم نواز کو جاتی امرا اراضی کیس میں نیب نے طلب کرلیا,نیب نے مریم نواز کو 2مارچ کی صبح 11بجے جوائنٹ انوسٹی گیشن ٹیم کےسامنے پیش ہونے کی ہدایت کردی,اس سے قبل مریم نوازکو11 اگست2020 کو طلب کیاگیاتھا۔

مریم نواز کی اراضی کے متعلق تفتیش میں قومی احتساب بیورو لاہور نے مختلف موضع جات کی چودہ سو چالیس کنال اراضی کی رسیدیں مانگی ہیں,مریم نوازپر رائیونڈ میں خلاف قانون اراضی سستے داموں خریدنے کا الزام ہے,جس پر نیب نےمریم نوازسےایک ہزار440کنال اراضی پرجواب طلب کیا تھا۔

نیب کی جانب سے پو چھا گیا مریم نواز سے زمین خریدنے کیلئے رقم کہاں سے آئی۔ اراضی کی خریداری پرکتنا ٹیکس اورکتنی ڈیوٹی دی۔ ایک ہزار400کنال میں سےاگرکوئی زمین فروخت کی گئی تواسکی تفصیلات بھی طلب کی ہیں۔

نیب نے پوچھا تھا کہ بتایا جائے حاصل کی گئی زمین کس مقصد کےلیےاستعمال کی جارہی ہے۔ رائیونڈاراضی کیس میں مریم نوازکے بعد نوازشریف اور ان کی والدہ شمیم بیگم کو بھی شامل تفتیش کیا گیا,اراضی کیس میں نیب کی جانب سے سابق ڈی سی لاہور نور الامین مینگل اور احد چیمہ بھی شامل تفتیش کر رکھا ہیں۔

2014 میں رائے ونڈ میں مریم نواز کے نام 2 سو ایکٹر زمین منتقل کی گئی, 100 کنال زمین شہباز شریف اور 100 کنال زمین نواز شریف کے نام علیحدہ سے منتقل کی گئی۔ زمین منتقلی میں ایل ڈی اے کے قواعد و ضوابط کو نظر انداز کیا گیا۔ شریف فیملی کی زمین کے ارد گرد تعمیرات کو روکنے کے لئے اراضی کو گرین لینڈ قرار دیا گیا تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >