لاہور میں غیرت کے نام پر باپ کے ہاتھوں جوان بیٹی قتل

لاہور کے علاقے شالیمار میں باپ نے طیش میں آکر بیٹی اور اس کے آشنا کو قتل کردیا، مقتولہ شہناز کے والد کو گرفتار کرلیا گیا ہے,پولیس واقعے کی مزید تحقیقات کررہی ہے۔

پولیس کے مطابق نوجوان زبیر کوثر سے ملنے آیا تھا جسے کوثر کے باپ اکرم نے دیکھ لیا اور طیش میں آ کر فائرنگ کردی اس دوران فائرنگ سے کوثر جاں بحق جبکہ اس کا آشنا زبیر اور ملزم کا بیٹا یاسین زخمی ہو گیا۔

پولیس نے ملزم اکرم کو گرفتار کرکے مقتولہ کی لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے بھجوا دیا، جبکہ دونوں زخمیوں کو مقامی اسپتال منتقل کر دیا گیا ہے۔

شالیمار پولیس نے مقتولہ شہناز کی والدہ شمیم اختر کی مدعیت میں مقدمہ درج کرکے واقعے کی تفتیش شروع کر دی۔

گرفتاری کے بعد مقتولہ کے والد نے پولیس کو بیان دیا کہ بیٹی کوآشنا کےساتھ دیکھ کردونوں پرفائرنگ کی،فائرنگ سے شہناز بی بی موقع پر جاں بحق ہوگئی جبکہ آشنا زبیر شدید زخمی ہوگیا۔

پولیس نے واقعے کی ایف آئی آر درج کرلی۔ جس کے مطابق اکرم نے غیرت کے نام پر زبیر ولد ظفر اقبال اور اپنی بیٹی شہناز کوثر کو فائرنگ کرکے شدید زخمی کردیا،شہناز کوثر زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے جاں بحق ہوگئی جبکہ آشنازبیر میواسپتال  ایمرجنسی وارڈمیں زیر علاج ہے۔

اس سے قبل گزشتہ سال دسمبر میں لاہور میں شادی سے 3 دن پہلے غیرت کے نام پر بہن کو تشدد سے قتل کرنے والے کو گرفتار کر لیا گیا۔

پولیس کے مطابق نشتر کالونی کے رہائشی ملزم نعیم نے شک کی بنیاد پر بہن کو قتل کیا تھا۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>