تحریک انصاف کا الیکشن کمیشن کا فیصلہ چیلنج کرنیکا فیصلہ

تحریک انصاف کا الیکشن کمیشن کا فیصلہ چیلنج کرنیکا فیصلہ

پاکستان تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن کے این اے 75 کا ضمنی انتخاب کالعدم قرار دیتے ہوئے 18مارچ کو تمام پولنگ اسٹیشنز پر دوبارہ پولنگ کے فیصلے کو چیلنج کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

تفصیلات کے مطابق الیکشن کمیشن کے این اے 75 کے ضمنی انتخاب کالعدم قرار دینے کے فیصلے پر ردعمل سامنے آ گیا ہے، جس میں تحریک انصاف نے الیکشن کمیشن کا فیصلہ چیلنج کرتے ہوئے قانونی آپشن استعمال کرتے ہوئے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ جانے کا فیصلہ کیا ہے۔

اسی سلسلے میں وزیراعلی پنجاب کی معاون خصوصی برائے اطلاعات و نشریات ڈاکٹر فردوس عاشق اعوان کی جانب سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر جاری کیا گیا ہے، جس میں انہوں نے کہا کہ "ڈسکہ ضمنی الیکشن پر الیکشن کمیشن کے فیصلے پر ہمارے تحفظات ہیں”

صوبائی وزیر اطلاعات فردوس عاشق اعوان کا ٹوئٹر پر جاری اپنے پیغام میں مزید کہنا ہے کہ "‏تحریک انصاف کے امیدوار علی اسجد ملہی قانونی آپشن استعمال کرتےہوئے فیصلے کے خلاف سپریم کورٹ میں اپیل کرینگے! ڈسکہ کے عوام نے تحریک انصاف کے حق میں فیصلہ دیا لیکن فاتح امیدوار کو حلقے کی نمائندگی سے روکنا سمجھ سے بالاتر ہے”

خیال رہے کہ الیکشن کمیشن آف پاکستان نے ڈسکہ ضمنی انتخاب کالعدم قرار دیتے ہوئے تمام پولنگ اسٹیشنز پر دوبارہ انتخابات کروانے کا فیصلہ کیا ہے، اس کے علاوہ الیکشن کمیشن نے ڈپٹی کمشنر، ڈی پی او، اسسٹنٹ کمشنر اور ایس ڈی پی او کو معطل کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔

اس کے علاوہ الیکشن کمیشن نے چیف سیکریٹری اور آئی جی پنجاب کو وضاحت کیلئے طلب کر لیا ہے جب کہ ‏کمشنر اور آرپی او کیخلاف کارروائی کےاحکامات جاری کر دیے ہیں۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے اپنے فیصلے میں کہا ہے کہ تمام شواہد دیکھ کر اس نتیجے پر پہنچے کہ انتخابی ماحول فراہم ‏نہیں کیاگیا، حلقے میں انتخابات آزادانہ اور ایمانداری سے نہیں کرائے گئے ، ضمنی الیکشن ‏کےدوران لڑائی جھگڑے کے واقعات ہوئے اور ووٹرز کو ان کا حق مکمل طور پر فراہم نہیں ‏کیاجاسکا۔

الیکشن کمیشن آف پاکستان نے جمعرات کے روز اپنے جاری کردہ فیصلے میں کہا ہے کہ آرٹیکل 218 (3) کے تحت ضمنی انتخاب کالعدم قرار دیا جاتا ہے، این اے ‏‏75میں دوبارہ انتخابات 18مارچ 2021 کو ہو گا جبکہ الیکشن کمیشن کا تفصیلی فیصلہ بعد میں جاری کیا جائے گا۔

    • لگتا ہے سارے نسواری آج نسوار کھانا بھول گئے ہیں ۔ جعلی خان نیازی نے بھی سادہ دل اور سادہ لوح نسواریوں کو یو ٹرن کے پھیرے دے دے کر بغیر نسوار کے خوب چکر دلوائیں ہیں ۔ اب تو نسواری بھی فرش پر بیٹھ کر ھاتھ باندھ رہے ہیں کہ جعلی خان ہمیں ان چکروں کے بجائے پرانی نسوار کے چکر ہی لینے دیں ۔ نیازی خود تو بے آبرو تھا ہی اب ان نسواریوں کے رواج میں بھی جھوٹ رج کے رچا گیا ۔ 😂

      • نسوری بھائ ۔ آٹا چور، چینی چور ، دوائیاں چور کے ساتھ ساتھ اب ووٹ چور کا بھی نیا خطاب مبارک ہو ۔ نسواریاں دیاں موجاں ای موجاں ، جتھے بیندے لیساں ای لیساں۔

          • نسواری بھائ ، یہ کس نے تمہیں بتایا ہے ؟۔ بنی غالہ کے پرتعیش گھر میں رہنے والا سوکھی روٹی کھاتا ہے ، سلائ مشینوں سے خیراتی ادارہ کھولتا ہے اور بقول چاچا کپی ، رشوت نہیں لیتا ، لیکن لاکھوں کے تحفے قبول کرلیتا ہے ۔ ۔

          • وہ۔چوری کے پیسوں سے نہیں بنا۔۔۔ اور بھینسوں کے آپلے بنانے والے جا مجوں کو پانی وغیرہ دے فضول وقت ضائع نہ کر۔۔۔

          • نسواری پچکاری ، تم بار بار گجر اور مجوں کی باتیں کررہا ہے ، اپنی گھریلو منجو پر نظر رکھ ، ایسا نہ ہو کہ کوئ گجر ان کا دودھ نکال کے لے جائے اور تو سوتا رہے ۔ 🤭 ۔

  • اسجد ملی اتنا سیریس تھا پی 45 فارمز تک جمع نہ کرا سکے ورنہ شائد فیصلہ مختلف ہوتا۔۔
    مان لے کہ یہ بندہ ٹھیک نہیں یے۔ اسکے پاس پی 45 تھے ہی نہیں یا تخفیف شدہ تھے۔۔۔ یہ چول مخالف عورت پہ ذاتی حملے کرتا ہے اور انتظامیہ کیساتھ مل کے دو نمبریاں کی ہیں۔۔۔ اگر پورے حلقے میں الیکشن کرانے ہو تو پی ٹی آئی اپنا امیدوار بدلے۔ یہ ایک یارا ہوا گھوڑا ہے۔۔ اسکا تیسرا الیکشن ہے اور ہارتا کے۔۔

    • نسواری بھائ ،کبھی کبھی نسوار کی چٹکی بھر کے سچ نکل ہی جاتا ہے ، ویسے یہ اسجد ملجہی شکل سے ہی چوول نظر آتا ہے ، شایہ مرغی چور بھی ہو ، عورتوں سے بحث کرنے کے علاوہ ٹیلم پاڈر کی ڈبیا پرس میں بھی ضرور رکھتا ہوگا ۔ کیا وجہ ہے کہ سارے مولیو ، نسواریوں ،چوولوں اور مرغی چوروں کو پی ٹی آئ میں جگہہ ملتی ہے ۔ اب آپ کی مثال دیکھ لو ، ابھی سے لائن میں کھڑے ہو ، لیکن کوالیفیکیشن صرف نسواری !

        • نسواری بھائ ، آج نسوار پیسنے کا کام ملجی چوول کے حوالے کردے ۔ کبھی کبھی چھٹی بھی کرلیا کر ، اسی طرح نسوار پیستا رہا تو ضرور جنت میں جائے گا ۔ کچھ جعلی خان نیازی سے ہی سیکھ لے ، آجکل وہ نسوار پیسنے کے بجائے کوکین پیس رہا ہے ، آخر ترقی ترقی ہوتی ہے ۔

  • الیکشن کمیشن نے ہمیشہ ن لیگ کی لونڈی کا کردار ادا کیا ھے ہمیشہ عوام کے ووٹوں کی توہین کی ھے بجائے اراوز ریٹرنگ آفیسر کو عبرت کا نشان بنایا جاتا سارا الیکشن دوبارہ کرانے کا فیصلہ سنا دیا ھے الیکشن کمیشن کی وجہ سے ہمیشہ عوام کا ووٹ چوری کیا گیا ھے آگر الیکشن کمیشن انسان کا بچہ ہوتا تو کیسی کی ہمت نہ ہو کہ وہ ایک ووٹ کا بھی فراڈ کرسکے۔ الیکشن کمیشن ایک بڑا شیطان ھے اس میں کوئی شک نہیں ھے

    • حیرت ہے تمہاری ایمانداری بھری تقریر پر ۔ سب ڈرامہ آنکھوں کے سامنے ہوتے دیکھ کر بھی الیکشن کمیشن کو ن لیگ کی حمایتی کمیشن قرار دے رہے ہو ۔ کیا پریزائڈنگ آفیسر ( بیس کے بیس) یہ الیکشن ن لیگ کے امیدوار کے خلاف لڑ رہے تھے ؟ تم یہ تو تسلیم کرتے ہو کر ان بیس آفیسران نے بے ایمانی اور اپنے فرائض کی انجام دھی میں خیانت کی ، لیکن یہ سب کچھ کہنے کے بعد تم بھی پچھلی گلی سے نکلنے کی کوشش کر رہے ہو ۔ ان بیس آفیسرز کی خیانت کے پیچھے جو اصل چہرے ، اصل مجرم ہیں ان کو بے نقاب کیا جانا بہت ضروری ہے ۔ اور انکی بے نقابی ہی ظاہر کرے گی کہ پی ٹی آئ کا اصل چہرہ کتنا مکروہ ہے ۔ آج پانچ دن سے پی ٹی آئ کے بھانڈ ہر ٹی وی شو میں آکر یہ کہہ رہے تھے کہ الیکشن کمیشن دھاندلی شدہ انتخابات میں چوروں کو فاتح ڈکلیر کرے اور اس طرح سارے چور اکھٹے ہو کر اپنے دبر کا زور لگاتے رہے ۔ پھر یکدم کل سے بیک وقت طوطے کی طرح بونگی کو رٹنا شروع کردیا کہ بیس حلقوں میں انتخابات منظور ہیں ۔ لیکن ایک بھی مردہ ضمیر پی ٹی آئ کے فرد نے یا پنجاب حکومت کے کسی فرد نے یہ جرت نہ کی کہ وہ ضلعی انتظامیہ کو بلا کر سوال کرتا کہ الیکشن کمیشن کے اس طرح بلانے پر انہوں نے جواب کیوں نہیں دیا ۔ اس کا مطلب صاف ظاہر ہے کہ یہ سب فراڈ انہوں نے ملی بھگت سے کروایا تھا اور پکڑے گئے ۔ کوئ شرم ہوتی ہے کوئ حیا ہوتی ہے ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >