پہلی بیوی نے دوسری شادی کرنے پر شادی ہال میں شوہر کو چھری کے وار سے زخمی کر دیا

سندھ کے علاقے نواب شاہ کے نواحی گاؤں علی اکبر مہر کا رہائشی نیاز مہر دوسری شادی کرنے کیلئے شادی ہال پہنچا تو اس کی پہلی بیوی کو اس کی اطلاع ملی جس پر وہ بھی یہاں پہنچ گئی. خاتون نے بغیر اجازت شادی کرنے پر شوہر کو چھری کے پے در پے وار کر کے زخمی کر دیا.

خاتون کی جانب سے غصے کی حالت میں کیے جانے والے اقدام کے بعد شادی کے شرکا میں خوف و ہراس پھیل گیا اور عروسی ملبوسات میں سجی دوسری دلہن یہ سب دیکھ کر بے ہوش ہو گئی.

نوابشاہ پولیس کے مطابق زخمی(دلہا) نیاز مہر پیشے کے اعتبار سے سرکاری اسکول کا ٹیچر ہے جسے زخمی حالت میں پیپلز میڈیکل ہسپتال نواب شاہ منتقل کر دیا گیا ہے.

پولیس کے مطابق حملہ آور خاتون زخمی نیاز مہر کی پہلی بیوی ہے جس نے ارادہ قتل سے شوہر پر چھری کی مدد سے حملہ کیا. مقامی پولیس کے مطابق خاتون کو جائے وقوعہ سے چھری سمیت گرفتار کر لیا گیا ہے.

پولیس کا کہنا ہے کہ ملزمہ نے تصدیق کی ہے کہ اس نے شوہر کی دوسری شادی سے دلبرداشتہ ہو کر غصے کی حالت میں یہ قدم اٹھایا تھا.

  • She committed sucide later. She was not first wife, she was girl friend. He was abusing her. He married once and told her, it was forced by parents, then he went to marry second girl but not marrying his girl friend. How could a man so mean to his girl friend.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >