پاوری گرل سے متاثر خواتین پولیس اہلکار مشکل میں،فرض کی ادائیگی کو’خواری’کہہ دیا

کراچی میں ایس پی صدر ڈویژن کی جانب سے سندھ اسمبلی کے قریب دوران ڈیوٹی پاؤری گرل جیسی ویڈیو بنانے والی تینوں خواتین پولیس اہلکاروں کو معطل کر دیا جس کے بعد تینوں اہلکاروں کا تبادلہ ایس ایس پی ساؤتھ ریزرو گزری میں کر دیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق صدر ویمن پولیس اسٹیشن ڈسٹرکٹ ساؤتھ میں تعینات 3 لیڈی کانسٹیبلز طوبیٰ علی، زہرہ مظہر اور تابندہ حفیظ نے دوران ڈیوٹی ایسی ٹک ٹاک ویڈیو بنائی جس میں انہوں نے پاؤری گرل سے متاثر ہو کر ویڈیو میں اپنے فرض یعنی ڈیوٹی کو خواری کا نام دی تھا۔

ان لیڈی کانسٹیبلز نے کہا تھا کہ "یہ ہم ہیں، یہ ہماری گاڑی ہے اور یہ ہماری خواری (ڈیوٹی) ہو رہی ہے”۔ مذکورہ ٹک ٹاک ویڈیو دیکھتے ہی دیکھتے سوشل میڈیا پر وائرل ہو گئی اور جب یہ متعلقہ افسران تک پہنچی تو ایس پی صدر زاہد پروین نے ایکشن لیتے ہوئے تینوں کی معطلی کا حکم نامہ جاری کر دیا۔

پولیس ترجمان کے مطابق متعلقہ خاتون اہلکاروں کو نہ صرف معطل کیا گیا ہے بلکہ معاملے پر افسران بالا کی جانب سے سخت برہمی کا اظہار کیا گیا ہے۔

  • So what if they decide to have some fun ? I think this should be taken very lightly and off course warn them not to use these types of derogatory words for their job, from which they put bread on their tables.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >