سینیٹ انتخابات:قومی،سندھ،کے پی اور بلوچستان اسمبلیوں کے غیر حتمی نتائج سامنے آ گئے

سینیٹ انتخابات:قومی،سندھ،کے پی اور بلوچستان اسمبلیوں کے غیر حتمی نتائج سامنے آ گئے

سینیٹ انتخابات: اسلام آباد، سندھ، خیبر پختونخوا اور بلوچستان کی اسمبلیوں کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج سامنے آ گئے۔

سینیٹ کے انتخابات کا میدان سجنے کے بعد  اسلام آباد، سندھ، خیبر پختونخوا اور بلوچستان کی اسمبلیوں کے غیر سرکاری اور غیر حتمی نتائج سامنے آ گئے ہیں، سینیٹ انتخابات میں پولنگ کا عمل صبح 9 بجے سے شروع ہو کر بغیر کسی تعطل کے شام 5 بجے تک جاری رہا۔

اسلام آباد سے قومی اسمبلی کی نشست کے اپوزیشن اتحاد اے پی ڈی ایم کے مشترکہ امیدوار یوسف رضا گیلانی نے حکومتی امیدوار حفیظ شیخ کو پانچ ووٹوں کے فرق سے شکست دی ہے، یوسف رضا گیلانی نے 169 جبکہ حفیظ شیخ نے 164 کو حاصل کیے، سینیٹ الیکشن میں ٹوٹل 340 ووٹ ڈالے گئے جن میں سے 7 ووٹ مسترد کر دیئے گئے۔

دوسری جانب سے تحریک انصاف کی قومی اسمبلی میں خواتین کی نشست پر امیدوار فوزیہ ارشد 174 ووٹ لے کر کامیاب ہوئی ہیں جب کہ ن لیگ کی امیدوار فرزانہ کوثر کو 161 ووٹ ڈالے گئے۔

سندھ سے سینٹ انتخاب میں پاکستان پیپلز پارٹی 11 نشستوں میں سے سات نشستیں اپنے نام کرنے میں کامیاب ہوئی ہے جبکہ حکومتی اتحادی ایم کیو ایم اور تحریک انصاف کے حصے میں 2، 2 سیٹیں آئی ہیں جبکہ جی ڈی اے اور ٹی ایل پی کو ناکامی کا منہ دیکھنا پڑا۔

سندھ اسمبلی میں پیپلزپارٹی کی شیری رحمان، سلیم مانڈوی والا، تاج حیدر، جام مہتاب اور شہادت اعوان، ایم کیو ایم کے فیصل سبزواری اور پی ٹی آئی کے فیصل واوڈا جنرل نشست پر کامیاب ہوئے۔

سندھ سے ٹیکنو کریٹ کی دو نشستوں پر پیپلز پارٹی کے فاروق ایچ نائیک اور پی ٹی آئی کےسیف اللہ ابڑو سینیٹرز منتخب ہو گئے جبکہ خواتین کی دو مخصوص نشستوں پر پیپلز پارٹی کی پلوشہ خان اور ایم کیو ایم کی خالدہ اطیب کامیاب ہوئیں، خواتین نشستوں پر 4، جنرل پر 6 اور ٹیکنوکریٹ کی نشست پر 3 ووٹ مسترد ہوئے۔

دوسری جانب خیبر پختونخوا سے تحریک انصاف کے 10 امیدوار کامیاب قرار پائے ہیں، جن میں جنرل پر شبلی فراز، محسن عزیز، لیاقت ترکئی، فیصل سلیم اور ذیشان خانزادہ، خواتین نشستوں پر فلک ناز چترالی اور ڈاکٹر ثانیہ نشتر، ٹیکنو کریٹ پر دوست محمد اور ہمایوں مہمند کامیاب قرار پائے۔

اسی طرح بلوچستان اسمبلی سے بھی غیر حتمی غیر سرکاری نتائج کے مطابق حکومتی اتحاد نے سات جنرل نشستوں میں سے اپنے حمایت یافتہ آزاد امیدوار سمیت کل پانچ نشستیں اپنے نام کی ہیں، حکومتی اتحاد نے جو پانچ سیٹیں اپنے نام کی ہیں ان میں آزاد امیدوار عبدالقادر، بلوچستان عوامی پارٹی سے تعلق رکھنے والے 3 سینیٹرز سرفراز بگٹی، منظور کاکڑ اور پرنس عمر احمد زئی جبکہ عوامی نیشنل پارٹی کے عمر فاروق شامل ہیں۔

اسی طرح بلوچستان اسمبلی میں اپوزیشن اتحاد میں شامل جماعتوں نے دو جنرل نشستوں پر کامیابی سمیٹی ہے، ان میں جمیعت علماء اسلام ف کے مولانا عبدالغفور حیدری اور بی این پی کے قاسم رونجھو شامل ہیں، اسی طرح ٹیکنوکریٹس کی 2 نشستوں پر جے یو آئی کے کامران مرتضیٰ اور بلوچستان عوامی پارٹی کے سعید ہاشمی نے جبکہ اقلیتی نشست پر دنیش کمار نے کامیابی اپنے نام کی۔

  • زنانہ یا مردانہ کے علاوہ جیولری کے شوقین درمیانہ بھی نئے سینیٹر سے ملتے ہوئے احتیاط کریں . یوسف رضا گیلانی جیت گیا ہے

  • Losing islamabad seat is really big upset for PTI as it gives strength to PPP’s narrative about bringing no-confidence motion against PM IK. Now as IK decided to go for vote of confidence which is good decision. IK will give a big surprise during vote of confidence.

  • In provinces, provincial chapters of all parties managed everything very well as compare to center.
    Particularly provincial chief executive of KPK Mahmood Khan proved his mettle once again and all candidates of PTI comfortably secured their seats. Hats off to you Mahmood Khan.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >