این اے 75 ڈسکہ،پی ٹی آئی نے الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا

پی ٹی آئی نے این اے 75 کے ضمنی الیکشن سے متعلق الیکشن کمیشن کا فیصلہ سپریم کورٹ میں چیلنج کر دیا۔ تحریک انصاف کے امیدوار علی اسجد ملہی نے سپریم کورٹ میں دائر درخواست میں مؤقف اپنایا کہ الیکشن کمیشن نے دستیاب ریکارڈ کا درست جائزہ نہیں لیا۔

درخواست میں کہا گیا ہے کہ الیکشن کمیشن کا فیصلہ حقائق کے برعکس ہے، این اے 75 ڈسکہ میں دوبارہ انتخابات کرانے کے حکم کا کوئی جواز نہیں۔ دوبارہ الیکشن سے حلقے کے عوام کو دوبارہ لا اینڈ آرڈر کی صورتحال کا سامنا کرانا ہے جس کی کوئی مناسب وجہ نہیں۔

علی اسجد ملہی نے درخواست میں استدعا کی ہے کہ الیکشن کمیشن کا ضمنی الیکشن کالعدم قراردے کرنیا الیکشن کرانے کا فیصلہ کالعدم قراردیا جائے۔

درخواست میں عدالت سے مطالبہ کیا گیا ہے کہ 19 فروری کے این اے 75 ڈسکہ کے انتخابی نتائج جاری کرنے کا حکم دیا جائے۔

یاد رہے کہ 19 فروری کو این اے 75 ڈسکہ کے ضمنی الیکشن میں بدنظمی دیکھنے میں آئی تھی اور کشیدہ صورتحال اور دونوں جانب سے ہونے والی فائرنگ کے سبب 2 افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

  • Good move, To hell with selection commission of Pakistan. Now ball is in the court of Judges who themselves are corrupt from head to toe.
    Khan ney saab ko nanga ker diya. well done Imran Khan!

    • اس گول گول آنکھوں والے الو کی حالت قابل دید ہے ۔ لگتا ہے ابھی ٹپک کر نیچے گر پڑیں گی ۔ یہ الو اب کورٹ میں اپنی رھتی بیعجتی کروائے گا ۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >