باربار شکست سےدماغ الٹ ہی جاتا ہے، مریم نواز کی حکومت پر تنقید

شہر اقتدار میں صورتحال اس وقت قابو سے باہر ہوئی جب لیگی رہنماؤں کی پریس کانفرنس میں پی ٹی آئی کارکنان نے ہنگامہ خیز انٹری دی، لیگی رہنما اور سابق وزیراعظم شاہد خاقان عباسی اور دیگر رہنما میڈیا سے گفتگو کرررہے تھے تو پی ٹی آئی اراکین نے بات کرنے نہ دی، لیگی قیادت میڈیا ٹاک کرکے واپس جانے لگے تو کارکنان نے گھیر لیا،مریم اورنگزیب سے بدتمیزی کی گئی،سابق وزیراعظم شاہد خاقان اور مصدق ملک کو تھپڑ تک مارے گئے۔

مسلم لیگ ن کی نائب صدرمریم نواز نے ٹوئٹر پر پی ٹی آئی اراکین کے حملے کی شدید الفاظ میں مذمت کی،مریم نواز نے کہا کہ پے در پے ذلت آمیز شکست کا سامنا ہو اور اقتدار بھی ہاتھ سے جاتا دکھائی دے تو یوں دماغ کا الٹ جانا سمجھ آتا ہے،شاہد خاقان عباسی، احسن اقبال، مصدق ملک، مرتضی جاوید عباسی اور خصوصاً مریم اورنگزیب پر فخر ہے، جنھوں نے شیروں کی طرح ووٹ چوروں اور غنڈوں کا مقابلہ کیا۔

پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر تحریک انصاف کے کارکنان نے لیگی رہنماؤں شاہد خاقان عباسی اور مصدق ملک کو دھکے دیئے جب کہ گربیان بھی پکڑا،لیگی رہنماؤں کی پریس کانفرنس کے دوران تحریک انصاف کے کارکنوں نے ہنگامہ آرائی کی اور نعرے بازی شروع کردی، پی ٹی آئی کارکنان نے پلے کارڈز اور پوسٹر بھی اٹھارکھے تھے۔

پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر صورتحال اس وقت مزید کشیدہ ہوئی جب تحریک انصاف کے کارکنان نے پارلیمنٹ ہاؤس جانے والے ن لیگی رہنماؤں کا گھیراؤ کیا،اس دوران ہاتھا پائی ہوئی اور کارکنان نے شاہد خاقان عباسی کو دھکے دیئے جب کہ مصدق ملک کا گریبان بھی پکڑا گیا،جب کہ پی ٹی آئی کارکنان نے احسن اقبال کو جوتا دے مارا۔

لیگی رہنماؤں کی بھی تحریک انصاف کے کارکنان کے ساتھ ہاتھا پائی شروع ہوئی تو کشیدہ صورتحال کے باعث پولیس کو دخل اندازی کرنی پڑی،پولیس نے تحریک انصاف کے کارکنان کو لیگی رہنماؤں کے درمیان کشیدگی ختم کی،جس کے بعد لیگی رہنماؤں نے دوبارہ پریس کانفرنس کی اور پی ٹی آئی قیادت اور وزیراعظم سے واقعے کی تحقیقات کا مطالبہ کیا۔

پی ٹی آئی کارکنان کی بڑی تعداد صبح سے ہی ڈی چوک میں جمع تھی اور کارکنان پارلیمنٹ ہاؤس کے قریب جانے کیلئے نعررے بازی کرتے رہے،کارکنان کا کہنا تھا کہ پولیس نے ڈی چوک گیٹس بند کر رکھے ہیں، پی ٹی آئی کارکنان نے مولانا فضل الرحمان کے خلاف بھی نعرے بازی کی۔

پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر مسلم لیگ لیگی رہنماؤں احسن اقبال، مریم اورنگزیب اور مصدق ملک کے ہمراہ مشترکہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے شاہد خاقان عباسی کا کہنا تھا کہ قومی اسمبلی کا اجلاس بلایا گیا جو ناصرف غیر اخلاقی اور غیر قانونی بھی ہے، رات کے اندھیرے میں اجلاس بلانے کا نوٹیفیکشن جاری کیا گیا، صدر نے بھی وزیراعظم پر عدم اعتماد کا اظہار کیا۔

ترجمان مسلم لیگ ن مریم اورنگزیب نے حکومت کو غنڈہ کہہ ڈالا، کہا خواتین اراکین پارلیمنٹ پر حملہ کیا گیا ۔۔ مصدق ملک نے کہا کہ یہ مدینہ کی ریاست ہے جس میں عورتوں کی عزت محفوظ نہیں کیمرے کے سامنے مریم اورنگزیب پر حملہ کیا گیا، شاہد خاقان بولے حکومت اِن غنڈوں کے پیچھے نہیں چھپے ۔۔ میدان میں آکر مقابلہ کرے۔

  • Mujhey bahir jana hai aik choti c surgery kerwani hai jo k pakistan mein nahi hoti,, poocha kis cheaz ke, heart, liver, brain, lungs, jawab aaya nahi,, to phir samjh jaaiay wo surgery jo pakistan mein nahi hoti aur choti c b hai aur sab se chupaa k b karni hai, samjh to gay ho gay aap..

  • واقعی بار بار کی شکست سے دماغ اُلٹ جاتا ہے اسی لیے تو مریم کا دماغ الٹ چکا ہے جب کہ ان کے ٹاپ لیول کے لیڈرز پی ٹی آئی کے عام کارکن سے الجھ رہا ہے۔

  • دوسرا چپل کدھر ہے ؟ === جب پارلیمنٹ کا بائیکاٹ کیا تھا اور یہ بھی معلوم تھا کہ یہ پی ٹی ائی کے کارکن ہیں تو وہاں انکو چھیڑنے کا کیا مقصد تھا ؟ اس طرح تو ہوتا ہے اس طرح کے کاموں میں ! . پنگا از ناٹ چنگا .

  • مسز صفدر اعوان کی شلوار تو پچھلے پچیس سال سے اتری ہوئی ہے ، اب یے اپنے بچے کچھے بابوں اور ڈڈووں کو بھی ننگا دیکھنا چاہتی ہے ، ننگی فلمیں بنانے والی جو ٹھری

  • That is the difference between these people and Imran Khan; he says, "the more we lose, the better we prepare”. There is a proverb, "You can’t succeed if you don’t know what losing is”. These fake people are at their last push. They have no idea what Imran Khan has done to this nation; he has exposed these criminals badly and has given sense and courage to people, mainly the young Pakistanis, to stand against corruption. Pakistanis now strongly believe sharifs, zardiars are criminals. Pakistan will never be the same again regardless Khan is there or not.

  • That is the difference between these people and Imran Khan; he says, "the more we lose, the better we prepare”. There is a proverb, "You can’t succeed if you don’t know what losing is”. These fake people are at their last push. They have no idea what Imran Khan has done to this nation; he has exposed these criminals badly and has given sense and courage to people, mainly the young Pakistanis, to stand against corruption. Pakistanis now strongly believe sharifs, zardiars are criminals. Pakistan will never be the same again regardless Khan is there or not.


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >