وزیراعظم عمران خان سے پہلے کس کس وزیراعظم نے ایوان سے اعتماد کا ووٹ حاصل کیا؟

وزیراعظم عمران خان سے پہلے کس کس وزیراعظم نے ایوان سے اعتماد کا ووٹ حاصل کیا؟

قانون اور آئین میں اعتماد کے ووٹ سے متعلق تو بہت سے لوگوں نے پڑھ رکھا ہے کہ حکومت میں غیر یقینی کی صورتحال پیدا ہونے پر وزیراعظم اعتماد کا ووٹ حاصل کرتا ہے اور اس کے بعد معاملات کو آگے بڑھاتا ہے۔ مگر کیا آپ جانتے ہیں کہ وزیراعظم عمران خان پارلیمنٹ کے ایوان زیریں سے اعتماد کا ووٹ لینے والے پہلے وزیراعظم نہیں ہیں۔

عمران خان سے قبل 1993 میں نواز شریف نے اپنے پہلے دور حکومت میں قومی اسمبلی سے اعتماد کا ووٹ حاصل کیا تھا، جس سے متعلق نیو یارک ٹائمز نے 28 مارچ 1993 کو اپنی اخبار میں لکھا تھا کہ نواز شریف نے اعتماد کا ووٹ حاصل کیا اور بڑے مارجن سے کامیاب ہوئے۔

تب مسلم لیگ ن کے خلاف پیپلزپارٹی نے ایسے حالات پیدا کیے تھے کہ نواز شریف کو اعتماد کا ووٹ لینا پڑا، تاریخ نے آج پھر اپنے آپ کو دہرایا کیونکہ وزیراعظم عمران خان نے اعتماد کا ووٹ لیا اور حزب اختلاف کی جماعتوں کے اتحاد پاکستان ڈیموکریٹک موومنٹ (PDM) نے اسمبلی کے اجلاس کا بائیکاٹ کرنے کا اعلان کیا۔

مگر یاد رہے کہ آج فرق صرف اتنا تھا کہ اس بار پی پی پی اور مسلم لیگ (ن) تحریک انصاف کے خلاف متحد کھڑے ہیں۔

عمران خان کو اراکین اسمبلی سے اب ووٹ لینے کی ضرورت  اس لیے پڑی کیونکہ 3 مارچ کو اپوزیشن اتحاد نے پی ٹی آئی کی حکومت کو دنگ کر دیا جب اسلام آباد سے جنرل نشست پر سینیٹ انتخابات میں پی ڈی ایم امیدوار یوسف رضا گیلانی نے حکمران جماعت کے ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کے خلاف غیر متوقع طور پر فتح حاصل کی۔

جب 341 کے ایوان میں 340 ووٹ کاسٹ ہوئے اور یوسف رضا گیلانی نے حفیظ شیخ کے مقابلے میں 169 ووٹ حاصل کیے جبکہ حکومتی امیدوار صرف 164 ووٹ ہی حاصل کر پائے تھے۔ جبکہ پی ٹی آئی کی خاتون امیدوار فوزیہ ارشد نے اسی ایوان میں 174 ارکان کی حمایت سے کامیابی حاصل کی۔

  • غیرت والا ہو تو خود اعتماد کا ووٹ لیتا ہے
    بے غیرت ہو تو 3 بار نکالے جانے کے بعد بھی مجھے کیوں نکالا کی رٹ لگاتا ہے


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >