محکمہ اینٹی کرپشن کی خاتون ٹیچر کے پلاٹ پر قابض گروہ کے خلاف کارروائی

محکمہ اینٹی کرپشن کی خاتون اسکول ٹیچر کے پلاٹ پر قابض گروہ کے خلاف کارروائی

محکمہ اینٹی کرپشن پنجاب نے خاتون اسکول ٹیچر عذرا ظفر کے پلاٹ پر قبضہ کرنے والے گروہ کے خلاف کارروائی کرتے ہوئے مقدمہ درج کرلیا ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق ملتان کے علاقے آفیسرز کالونی میں ایک ریٹائرڈ سرکاری اسکول ٹیچر کے پلاٹ پر قبضہ مافیا نے اپنا انتظام قائم کرکے اپنا دفتر تعمیر رکھا تھا۔

عذرا ظفر نے اس حوالے سے مائیکروبلاگنگ ویب سائٹ ٹویٹر پر پوری داستان بیان کی جس پر ڈی جی اینٹی کرپشن محمد گوہر نے فوری نوٹس لیتے ہوئے تحقیقات کا حکم دیتے ہوئے کہا کہ صوبے بھر میں قبضہ مافیا کے خلاف کریک ڈاؤن جاری ہے۔قابض عناصر کے خلاف قانون کے مطابق کارروائی کی جائے گی۔

ڈی جی اینٹی کرپشن کے نوٹس لیتے ہی محکمہ حرکت میں آیا اور ریجنل ڈائریکٹر اینٹی کرپشن ملتان حیدر وٹو نے عذرا ظفر سے رابطہ کیا اور تمام تر معلومات حاصل کیں، پلاٹ کی رجسٹری اور دیگر ضروری دستاویزات حاصل کرکے تحقیقات کا آغاز کردیا۔

رپورٹ کے مطابق عذرا ظفر کی مہیا کردہ دستاویزات سے ثابت ہوگیا کہ پلاٹ ان کی ملکیت ہے اور اس پر دفتر قائم کرنے والے غیر قانونی طور پر اس پر قابض ہیں جس کے بعد خاتون ٹیچر کی مدعیت میں ایف آئی آر درج کی گئی۔

ایف آئی آر میں 7 ملزمان کو نامزد کیا گیا جن میں دیگر ملزمان کےساتھ ایس سی او لینڈر ریکارڈ سینٹر ملتان ندیم لودھی اور رجسٹری برانچ کے جونیئر کلرک ندیم چھٹہ بھی شامل ہیں، جن کی ملی بھگت سے قبضہ مافیا نے پلاٹ پر قبضہ کیا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >