حریم فاطمہ قتل کیس کی گھتی سلجھ گئی،گرفتار خاتون نے اعتراف جرم کرلیا

خیبرپختون خوا کے ضلع کوہاٹ میں ہونے والے حریم فاطمہ قتل کیس میں اہم پیشرفت سامنے آئی ہے، پولیس نے ایک خاتون کی گرفتاری کی تصدیق کر دی۔

تفصیلات کے مطابق ڈائریکٹر جنرل  پولیس کوہاٹ نے حریم فاطمہ قتل کیس میں ایک گرفتاری کی تصدیق کر دی ہے۔پولیس کے مطابق گرفتار خاتون نے اعتراف کیا ہے کہ رشتہ نہ ہونے پر انتہائی قدم اٹھایا اور بچی کو قتل کیا۔

خاتون نے اعتراف کیا ہے کہ وہ حریم کے چچا سے شادی کرنے کی خواہش مند تھی مگر بچی کے والد فرہاد اس کے خلاف تھے۔ انتقام لینے اور شادی میں بچی کے والد کو رکاوٹ سمجھنے پر حریم کو قتل کیا۔ ملزمہ کی شناخت رابعہ کے نام سے ہوئی جو حریم کے والد فرہاد کی دور کی رشتہ دار ہے۔

واضح رہے کہ کوہاٹ میں قتل ہونے والی تین سالہ فاطمہ کو لے جانے والی برقع پوش خاتون کی سی سی ٹی وی فوٹیج منظر عام پر آئی تھی جس میں خاتون کو بھاگتے ہوئے دیکھا گیا تھا۔حریم کی لاش اغوا کے اگلے دن گھر سے ایک کلومیٹر کے فاصلے سے ملی تھی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >