صحافی نے احتجاج کیا تو نوکری سے ہاتھ دھونا پڑا، رپورٹر کا دعویٰ

صحافی نے احتجاج کیا تو نوکری سے ہاتھ دھونا پڑا

92 چینل کے صحافی نے آزادی اظہار رائے کا استعمال کیا اور اپنے احتجاج ریکارڈ کروایاجس پر نوکری سے برخاست کردیا گیا، جی ہاں 92کے صحافی ریاض گوندل نے پنجاب کے وزیر مال ملک محمد انور کے تاخیر سے آنے پر احتجاج کیا تو وزیر مال نے اپنے اثر و رسوخ کا استعمال کرتے ہوئے ریاض گوندل کی نوکری ہی چھین لی۔

ریاض گوندل نے احتجاج کیا تھا کہ ہم دو گھنٹے سے انتظار کررہے ہیں، جہلم میں کرپشن کی انتہا ہورہی ہے، تمام سرکاری افسران ویلفیئر کی مد میں لوٹ مار کررہے ہیں، لیکن کیونکہ آپ نے ہمیں ٹائم نہیں دیا بہت ذلیل کیا اسلئے ہم بائیکاٹ کررہے ہیں، یہ کہنے کے بعد ریاض گوندل سمیت تمام صحافی اپنے اپنے مائیک لے کر چلے گئے۔

اس واقعے کے بعد وزیرمال نے اس وقت تو کچھ نہ کہا لیکن بعد میں طاقت کا استعمال کرتے ہوئے ریاض گوندل کو نوکری سے نکلوادیا۔

جیو نیوز کے صحافی جہانگیر ملک نے ویڈیو شیئر کرتے ہوئے بتایا کہ پہلے صحافیوں کو گھنٹوں انتظار کرواؤ، اور اگر اس پر احتجاج کریں تو انہیں مالکان سے کہہ کر نوکریوں سے نکلواو دو ۔۔ پنجاب کے وزیر مال ملک محمد انور سے صحافی کا احتجاج برداشت نہ ہوا بانوے کے صحافی ریاض گوندل کو نوکری سے فارغ کروا دیا، ساتھ ہی وزیرسائنس اینڈ ٹیکنالوجی فواد چوہدری پر بھی تنقید کی۔

جہانگیر ملک کے اس بیان کے بعد سوشل میڈیا پر فواد چوہدری پر تنقید کی جانے لگی،محسن عباسی نے لکھا کہ فواد چوہدری یہ ہوتا ہے مافیا جس کا تم بھی حصہ ہو۔

سالار سلیمان نے کہا کہ صحافیوں کو یکمشت ہو کر کام کرنا ہوگا۔کمزور طبقات کے ساتھ ایسا ہی ہوتا ہے۔اب اگر صحافی برادری اکٹھی ہو کر ان کی نوکری بحال کرواتی ہے تو سب کو کان ہونگے لیکن اگر یہ اسی چینل میں اپنی پوزیشن پر بحال نہیں ہوتے تو پھر وزراء ہمیں ایسے ہی ذلیل کرتے رہیں گے۔ صحافی تنظیمیں کردار ادا کریں۔

رانا افتخار نے کہا کہ شاباش ریاض گوندل ،ظالم حکمران کے سامنے کلمۂ حق کہنا جہاد ہے،مگر یہ ظالم سمجھتے ہیں کہ یہ رازق ہیں مگر میرا اللّہ رازق بھی ہے. اور ہرچیز پر قادر بھی ہے.
وَاللّہُ خَیرُالرّازِقِین
اِنّ اللّہَ عَلٰی کُلِ شَیً قَدِیر

دیگر صحافیوں اور صارفین کی جانب سے ریاض گوندل کی حوصلہ افزائی کی جارہی ہے، لیکن کچھ صارف کی جانب سے صحافیوں کو بھی تنقید کا نشانہ بنایاجارہاہے۔


Featured Content⭐


24 گھنٹوں کے دوران 🔥


From Our Blogs in last 24 hours 🔥


>