کئی ماہ تک روپوش رہنے والے مفتی کفایت اللہ آخرکار گرفتار

جے یو آئی رہنما مفتی کفایت اللہ 3 ایم پی او کے تحت مانسہرہ سے گرفتار

2 ماہ تک روپوش رہنے والے جمعیت علمااسلام (ف) کے رہنما مفتی کفایت اللہ کو مانسہرہ میں ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کر لیا گیا، ان کی گرفتاری تھری ایم پی او کے تحت عمل میں لائی گئی ہے۔

ڈی پی او مانسہرہ کے مطابق جے یو آئی رہنما مفتی کفایت اللہ کو 3 ایم پی او کے تحت ان کی رہائش گاہ سے گرفتار کر لیا گیا ہے اس کارروائی کے دوران پولیس کی بھاری نفری نے حصہ لیا وہ 2 ماہ سے زائد عرصہ تک روپوش رہے تھے۔

ڈی پی او مانسہرہ نے بتایا کہ مفتی کفایت اللہ کو وفاقی حکومت کی جانب سے ریاست مخالف بیانات دینے کے نتیجے میں گرفتار کرنے کا فیصلہ کیا گیا تھا۔ یاد رہے کہ 5جنوری کو آئی جی خیبر پختونخوا نے مفتی کفایت اللہ کی گرفتاری کے لیے تمام صوبوں کے آئی جیز کو خط لکھا تھا۔

اس خط میں آئی جی خیبرپختونخوا نے کہا تھا کہ مفتی کفایت اللہ کو گرفتار کر کے قانون کے مطابق پختونخوا پولیس کے حوالے کیا جائے، ان کے خلاف ایف آئی آر درج ہے، اور وہ کے پی پولیس کو مطلوب ہیں۔

دوسری جانب جمیعت علمائے اسلام نے بھی مانسہرہ کے امیر مفتی کفایت اللہ کی جانب سے مسلسل پارٹی ڈسپلن کی خلاف ورزیوں اور متنازع بیانات پر ان کی پارٹی رکنیت معطل کر رکھی ہے۔ انہیں اس سے قبل بھی گزشتہ سال اکتوبر میں گرفتار کیا گیا تھا تاہم پشاور ہائیکورٹ ایبٹ آباد سرکٹ کے حکم پر ان کی رہائی ہوئی تھی۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >