ہم معاہدے کے مطابق تحریک لبیک کے مطالبات پارلیمنٹ میں پیش کریں گے،وزیراعظم

ہم معاہدے کے مطابق تحریک لبیک کے مطالبات پارلیمنٹ میں پیش کریں گے،وزیراعظم

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ہم معاہدے کے مطابق تحریک لبیک پاکستان کے مطالبات کو پارلیمنٹ میں پیش کریں گے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان نے وفاقی کابینہ اجلاس کی صدارت کی ، اجلاس کے دوران وزیراعظم کو تحریک لبیک کی جانب سے ملک بھر میں احتجاجی مظاہروں سے متعلق بریفنگ بھی دی گئی۔

وزیراعظم عمران خان کو بتایا گیا کہ حکومتی ٹیم کی جانب سے تحریک لبیک سے مسلسل مزاکرات جاری تھے مگر تحریک لبیک مزاکرات کے ساتھ ساتھ احتجاج کی تیاری بھی کررہی تھی۔

وزیراعظم عمران خان نے اجلاس کے دوران بتایا کہ تحریک لبیک کے ممکنہ مارچ کے دوران شرپسند عناصر کے فائدہ اٹھانے کی رپورٹس موصول ہوئیں۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ آئندہ24 گھنٹے انتہائی اہم ہیں، امید کرتے ہیں حالات بہتری کی جانب جائیں گے،ہم شرپسند عناصر کو ملک کا امن خراب کرنے کی بالکل اجازت نہیں دیں گے۔

  • Pehlay to iss Noor Ul Haq Qadri, minister for religious affairs, say poochoo kay uss nay February mein TLP say agreement kion kia tha. Aur agar agreement kar hi lia to ab uss ko poora karo. Asal mein hukoomat nay February mein soocha ho ga keh inn TLP walon ko agreement kar kay tarkha detay hain. Ab bhugto. Waisay yeh Noor Qadri ab kahan chhup gaya hai.

    • TLP stopped the nation in February, and you believe Noor ul Haq Qadri made agreement on his own behalf with TLP. Imran Khan and General Bajwa were in dark about the government agreement with TLP ? Come to reality Mr Hussain. Noor ul Haq Qadri wouldn’t have signed anything without the government’s approval. Government’s policy was to delay the problem to solve the problem. In February everyone was furious about French cartoon issues of Holy Prophet PBUH. Government was expecting people would forget about it in 3 months. I have a feeling the government will sign a new agreement with the TLP that the French ambassador will be sent back in September this year. If you can’t solve the problem then keep delaying it. Tareekh pay Tareekh, Tareekh pay Tareekh. 🙂

  • جس طرح فرانس میں نبی اکرم کے خاکے بناۓ جاتے ہیں اسی طرح ایران میں بھی نبی اکرم اور دوسرے اصحاب اکرام کی تصویریں بنائی جاتی ہیں

    فرق صرف یہ ہے کے فرانس میں خاکے نفرت کے اظہار میں بناۓ جاتے ہیں اور ایران میں ان کی دینی حیثیت کے اظہار کے لئے

    فرانس میں بناے گئے خاکوں پر لوگوں کے جذبات بھڑک جاتے ہیں مگر ایران میں بناے گئے خاکے اور شبیہات پر کوئی احساس نہیں

    کیا یہ کھلا تضاد نہیں ؟؟


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >