ایسا نہیں ہوسکتا امیرغریب کیلئے الگ قانون ہو،وزیراعظم کا ترین سے متعلق سوال پر جواب

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ ایسا نہیں ہوسکتا غریب کیلئے الگ قانو ن ہو اور امیر کیلئے الگ، سب کی بات سننے کیلئے تیار ہیں ۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وزیراعظم عمران خان سرگودھا میں میڈیا سے گفتگو کررہے تھے اس موقع پر ان سے جہانگیر ترین کے خلاف کیسز اور ارکان اسمبلی کے خط سے متعلق سوال کیا گیا جس کے جواب میں وزیراعظم کا کہنا تھا کہ میں کیا کرتا ان لوگوں نے کارٹیل بنا کر عوام کو لوٹا ہے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا ہے کہ سوا سال کے دوران فی کلو چینی کی قیمت میں 26 روپے تک کا اضافہ ہوا ہے، عوام کا تحفظ کرنا تو حکومت کی ذمہ داری ہے۔

انہوں نے مزید کہا کہ ملک میں 60-70 شوگر ملوں کے مالکان کی جیبوں میں 144 ارب روپے جمع ہوگئے، چینی اسکینڈل کے حوالے سے کسی کو تحفظات ہیں تو بات کرنے کیلئے تیار ہوں مگر اربوں کی کرپشن کرنے والوں کے خلاف ثبوت بھی موجود ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ ملک کے کمزور طبقے کے بارے میں کبھی سوچا نہیں گیا، مہنگائی ایک بڑے مسئلہ کی چھوٹی سی وجہ ہے، رمضان میں اشیاء خوردونوش کی قیمتوں سے متعلق حکومت کے رمضان پیکج کی مانیٹرنگ میں خود کررہا ہوں۔

عمران خان کا مزید کہنا تھا کہ جب تک معاشرے میں سزا اور جزا نافذ نہیں ہوگی کوئی فائدہ نہیں ہوگا ، جب مدینہ کی ریاست قائم نہیں ہوئی تھی اس سے پہلے حالات بہت خراب تھے، حالات تب ہی بہتر ہوں گے جب طاقتور کو قانون کے کٹہرے میں لایا جائے گا۔

  • اس چینی کے کارٹیل کو توڑنا آسان کام نہی۔ عمران خان کو اس کام کا سہرا جاتا ہے۔ لیکن کچھ باتیں عمران کی بھی غلط ہیں۔
    خان کا یہ کہنا کہ سو ارب شوگر ملرز کی جیب میں گئے ہیں سچ نہی ہے۔ جب گنے کی قیمت ۱۲۰ سے ۱۸۰ اور ۲۰۰ روپئے ہوئی تو اضافی قیمت کا سب سے بڑا حصہ تو کسان کے پاس گیا ہے۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >