مظفرگڑھ : میڈیکل کی طالبہ پرنسپل اور ایڈمنسٹریٹر کے ہاتھوں اجتماعی زیادتی کا شکار

مظفر گڑھ میں نجی پیرامیڈیکل کالج کے پرنسپل اور ایڈمنسٹریٹر مبینہ طور پر طالبہ کو تین روز تک اجتماعی زیادتی کا نشانہ بناتے رہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق پیرا میڈیکل کالج کی پولیس کو دی گئی درخواست میں موقف اپنایا ہے کہ کالج کے پرنسپل اور انتظامی افسر نے تین روز تک مجھے اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا ہے اور کسی بھی قسم کی قانونی کارروائی سے بچنے کیلئے دونوں کی جانب سے مجھے بلیک میل بھی کیا جارہا ہے۔

متاثرہ لڑکی نے پولیس کو اپنے بیان میں بتایا کہ وہ ایل ایچ وی کا تین سے چار ماہ کا کورس کررہی ہے جہاں ملزم پرنسپل اکرام الحق نے مجھے آفس بلاکر کہا کہ آپ پر 40 ہزار روپے جرمانہ ہے جسے ختم کرانے کے لیے عدالت جانا پڑے گا۔

لڑکی نے مزید بتایا کہ چند کاغذات پر انگوٹے لگوانے کے بعد ملزم اکرام الحق اور ایڈمنسٹریٹر بابر نامعلوم مکان پر لے گئے جہاں مجھے تین دن تک اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا گیا اور دھمکی دی کہ کسی کو بتایا تو جان سے ماردیں گے۔

پولیس نے واقعے پر 5 ملزمان کو نامز د کرکے مقدمہ درج کرلیا اور ملزمان کی تلاش کیلئے چھاپے مارنا شروع کردیئے ہیں۔

پولیس کے مطابق افسوس ناک واقعہ 8 اپریل کو پیش آیا، لڑکی کا میڈیکل کروایا جاچکا ہے، رپورٹ آنے کے بعد صورتحال مزید واضح ہوجائے گی، دیگر پہلوؤں پر تحقیقات بھی جاری ہیں۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >