ٹی ایل پی کے اثاثے ، رہنماؤں کے شناختی کارڈز ، پاسپورٹس منجمد کرنے کا آغاز

ایک روز قبل کالعدم قرار دی جانے والی جماعت تحریک لبیک پاکستان کے بینک اکاؤنٹس، اثاثے اور مرکزی رہنماؤں کے شناختی کارڈ منجمد کرنے کی کارروائی کاآغاز کردیا گیا ہے۔

خبررساں ادارے کی رپورٹ کے مطابق وزارت داخلہ نے انسداد دہشت گردی ایکٹ 1997 کی شق11 ای کے تحت کالعدم جماعت کے بینک اکاؤنٹس اور اثاثے منجمد کرنے کا آغاز کیا۔

رپورٹ کے مطابق جماعت کے مرکزی رہنماؤں اور عہدیداران کے شناختی کارڈ اور پاسپورٹس بھی بلاک کیے جارہے ہیں، مزید ان رہنماؤں کے بینک اکاؤنٹس اور جائیداد خریدنے یا فروخت کرنے پر بھی پابندی عائد کی جارہی ہے۔

وزارت داخلہ نے بینک اکاؤنٹس اور اثاثے منجمد کرنے کیلئے مرکزی بینک اور پنجاب کے محکمہ ریونیو سے تعاون حاصل کرلیا ہے۔

تحریک لبیک ، عہدیداران اور کارکنان کو جاری اسلحے کے لائسنسز بھی منسوخ قرار دیئے جائیں گے۔

واضح رہے کہ گزشتہ روز سے ملک کے مختلف علاقوں میں اپنے امیر سعد رضوی کی گرفتاری کے بعد تحریک لبیک کی جانب سے احتجاجی مظاہرے جاری تھے جس کے بعد حکومت نے تحریک لبیک کو کالعدم قرار دینے کا فیصلہ کیا تھا۔


  • Featured Content⭐


    24 گھنٹوں کے دوران 🔥


    From Our Blogs in last 24 hours 🔥


    >